اگر چاہتے ہو کہ لوگ آپ کی عزت کریں تویہ پانچ کام چھوڑ دو

عزت ایک ایسی چیز ہے جو انسان اپنے عمل سے کماتا ہے۔ یہ بھی کہاجاتا ہے کہ عزت پانےسے پہلے عزت دینا سیکھو۔ زندگی میں بعض دفعہ انسان ایسے کام کرتا ہے۔ جو اس کی نظر میں تو اچھے ہوتے ہیں۔ لیکن وہ اس کی عزت کو بڑھانے کے بجائے تنگ کررہے ہوتے ہیں۔ وہ لوگوں کی نظروں میں اچھا بننے کے بجائے برا بن جاتا ہے۔ اور لوگ اس کے قریب آنے کے بجائے دور بھاگتے ہیں۔ آج ہم آپ کو پانچ ایسی چیزیں بتائیں گے جو لوگوں کی نظروں میں آپ کی عزت کم کرتی ہیں۔ جنہیں آپ کو کم کرنا چاہیے۔پہلی بات جو ہے وہ الوئنگ ادرز ٹو انٹرپٹ یو ہے۔ بعض دفعہ بات کرتے ہوئے بیچ میں ہی ٹوکنا شروع کردیتے ہیں۔ آپ کوئی بات کررہے ہو تو آپ کو نظراندا ز کرتے ہیں۔ آپ کی بات کے درمیان خود بولنا شروع ہوجائیں گے ۔

دوسروں کا اس طرح سے ٹوکنا ، نظرانداز کرنا واقعی اچھا نہیں لگتا۔ اگر لوگ آپ کو باربار اس طرح ٹوکنا شروع کردیں۔ اور آپ کچھ نہ کرسکیں۔ اور آپ اپنے آپ کو بڑا ڈاؤں محسوس کریں گے ۔ اور دوسروں کی نظروں میں آپ کی قیمت کم ہوجائے گی۔ اگر آپ اپنی بات کی عزت نہیں کروا سکتے ۔ تو دوسروں کے لیے کیا کرسکیں گے ؟ عزت بھی ہونی چاہیے لیکن ایک بارڈر لائن ضرور کھینچنی چاہیے ۔ لوگوں کو ان کی حد میں رکھنا چاہیے۔ پھر بھی کچھ لوگ اس لائن کو کراس کرنے کی کوشش کرتے رہیں گے ۔ اس لیے آپ بات کررہے ہیں۔ توکوئی آپ کی بات کو ٹو ک آپ کی بات میں بیچ بولنا شروع کردے ۔

دوسروں کا اس طرح سے ٹوکنا ، نظرانداز کرنا واقعی اچھا نہیں لگتا۔ اگر لوگ آپ کو باربار اس طرح ٹوکنا شروع کردیں۔ اور آپ کچھ نہ کرسکیں۔ اور آپ اپنے آپ کو بڑا ڈاؤں محسوس کریں گے ۔ اور دوسروں کی نظروں میں آپ کی قیمت کم ہوجائے گی۔ اگر آپ اپنی بات کی عزت نہیں کروا سکتے ۔ تو دوسروں کے لیے کیا کرسکیں گے ؟ عزت بھی ہونی چاہیے لیکن ایک بارڈر لائن ضرور کھینچنی چاہیے ۔ لوگوں کو ان کی حد میں رکھنا چاہیے۔ پھر بھی کچھ لوگ اس لائن کو کراس کرنے کی کوشش کرتے رہیں گے ۔ اس لیے آپ بات کررہے ہیں۔ توکوئی آپ کی بات کو ٹو ک آپ کی بات میں بیچ بولنا شروع کردے ۔

اگر آپ کسی سیلز کمپنی میں کام کرتے ہو تو آپ اپنی فیملی کو ریٹ پروڈکٹس بتا سکتے ہو۔ اس میں کوئی حرج نہیں ہے۔ لیکن اگر آپ ہر وقت ان کے کان لگے رہیں گے ان کو مجبو رکرتے رہیں گے۔ کہ وہ آپ کی پروڈکٹس ضرورخریدیں۔ تو لوگ اس بات کو پسند نہیں کریں گے ۔ اور آپ سے دور بھاگیں گے ۔ آپ اپنی پروڈکٹس انہیں ضرور بتائیں ۔ لیکن خریدنے کافیصلہ انہی کو کرنے دیں۔ بالکل ایساہی آپ کی رائے اور یقین کا ہوتا ہے۔ اگر آپ اپنی رائے ، اپنی بات اور یقین کو ہی صیحح سمجھیں گے ۔ اور ہر کسی کو کنویس کرنے کی کوشش کریں گے ۔ اگرآپ لوگوں پر زور دیں گے ۔ تو لوگ آپ سے دور بھاگیں گے۔ ایک بات ہمیشہ یاد رکھیں کہ لو گ ان کا احترام کبھی نہیں کرتے جو لوگوں کے خیالات کا خیال نہیں رکھتے۔

چوتھی بات ہے زیادہ شیخیاں نہ ماریں۔ جب لوگ بغیر پوچھے ہی اپنی تعریف کرنا شروع کردیں۔ اپنی کامیابی او ر اپنی حاصلات کی کہانیاں شروع کردیں۔ تو تھوڑا عجیب لگتاہے۔ یہ ٹھیک ہے کہ اپنی کامیابی پر فخر کرنا چاہیے اپنی خوشی کو اپنی فیملی اور دوسروں کے ساتھ شیئر کرنا چاہیے لیکن ہر وقت شیخیاں اور اپنے آپ کو ہیرو کہتار ہے گا تو لوگوں کی نظرو ں میں اپنی عزت کو کم کرتا جائےگا۔ اچھا کام ضرور کریں۔ لیکن اپنے آپ کو اچھا ثابت کرنے اور اپنی اچھائیوں کو ایڈ ور ٹائز کرنے کی کوشش مت کرو۔ پانچویں بات جو ہے وہ بیئنگ ڈس ہانیسٹ یا لائیر۔ جھوٹے آدمی کوکوئی پسند نہیں کرتا۔ اور نہ ہی کوئی اس کی عزت کرتاہے۔

جب آپ کو پتہ چل جائے کہ فلاں آدمی جھوٹ بول رہا ہے تو اس آدمی کی بات پر اعتماد کرنا مشکل ہوجاتاہے۔ اگر آپ کیے ہوئے وعدے پورے نہیں کرتے اور اپنے کام کو وقت پر نہیں کرتے ۔ بہانے بناتے ہیں ۔ اور سمجھتے ہیں کہ اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔ تو آپ غلط ہیں۔ آپکا ہر جھوٹ، ہر وعدہ خلافی اور ہر بہانہ آپ کی عزت کو کم کرتا جائےگا۔ لوگ آپ کو اعتماد کے قابل نہیں سمجھیں گے ۔ اس لیے کوئی وعدہ ایسا نہ کرو جسے آپ پورا نہ کرسکو۔ اگر کوئی ایسا کام ہے جس کو کرنے کے لیے آپ کے پاس وقت نہیں ہے۔ تو ایسے کام کرنے کی حامی مت بھریں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *