ملک میں پہلی دفعہ موسم گرما میں بدترین گیس کی قلت

لاہور، کراچی (مانیٹرنگ، این این آئی)ملک میں پہلی دفعہ موسم گرما میں گیس کی قلت پیدا ہو گئی ہے، نجی ٹی وی کے مطابق حکومت نے گیس بحران میں شدت کے باعث پنجاب اور خیبر پختونخوا میں مختلف سیکٹرز کی گیس بند کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے، تفصیلات کے مطابق پانچ جولائی تک سی این جی سمیت دیگر سیکٹرز کو گیس کی

فراہمی بند رہے گی۔سوئی ناردرن گیس کمپنی انتظامیہ کی طرف سے نان ایکسپورٹ انڈسٹری، سی این جی سیکٹر کو گیس کی سپلائی بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ تینوں سیکٹرز کو آج رات بارہ بجے سے پانچ جولائی تک گیس کی فراہمی معطل رہے گی۔یہ فیصلہ گیس کی سپلائی کم ہونے پر کیا گیا ہے، دوسری جانب سوئی ناردرن گیس کمپنی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ گھریلو صارفین کو بلا تعطل گیس کی فراہمی جاری رہے گی۔سوئی نادرن حکام کا کہنا ہے کہ 29 جون سے 5 جولائی تک نجی کمپنی کا ایل این جی ٹرمینل مرمت کے سلسلے میں بند رہے گا اور گیس لوڈمینجمنٹ کے تحت پنجاب، خیبرپختونخوا میں سی این جی سیکٹر سیمنٹ اور نان ایکسپورٹ انڈسٹریل سیکٹر کو بھی گیس فراہم نہیں کی جائے گی۔دوسری جانب سوئی سدرن گیس کمپنی نے سی این جی کی بندش کے دورانیے میں مزید 144 گھنٹوں کا اضافہ کردیا۔کراچی سمیت سندھ بھر میں سی این جی اسٹیشنز پیر 5 جولائی کی صبح 8 بجے تک بند رہیں گے۔ سوئی سدرن گیس کمپنی کی مطابق کنڑ پساکھی گیس فیلڈ کی بندش سے 160 ایم ایم سی ایف ڈی گیس کی قلت کا سامنا ہے۔کراچی سمیت سندھ بھر میں سی این جی اسٹیشنز 5 جولائی کی صبح تک بند رہیں گے۔سی این جی ایسوسی ایشن کے رہنما غیاث پراچہ کا سی این جی کی بندش پر کہنا ہے کہ ملک بھر میں گیس بندش ناقابل قبول ہے، انہوں نے کہا کہ بحران بدانتظامی کا نتیجہ ہے، بندش سے سی این جی کی بندش پر کئی سو ارب کا نقصان ہو گا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.