آزاد کشمیر الیکشن، ٹکٹ وفاقی وزیر نے کروڑوں روپے میں فروخت کیا، تحریک انصاف کے رہنما نے استعفیٰ دے دیا

اسلام آباد(این این آئی)سینئر پارلیمنٹرین، سابق وزیر سیاحت و ٹرانسپورٹ، امیدوار حلقہ جموں۔1،طاہرکھوکھر نے کہا ہے کہ جس طرح پی ٹی آئی قیادت نے آزادکشمیر کے عوام اور نظریاتی کارکنوں کو مایوس کیا اسی طرح 25 جولائی کو آزادکشمیر کے عوام پی ٹی آئی قیادت کو مایوس کریں گے۔انہوں نے تحریک انصاف کی بنیادی رکنیت

سے استعفیٰ دیتے ہوئے الزام لگایا کہ مہاجرین کے حلقوں میں جعلی ووٹ بنوانے میں تحریک انصاف آزاد کشمیر کی اعلیٰ قیادت ملوث ہے، انہوں نے مزید الزام لگایا کہ ایل اے 34 جموں 1 کا ٹکٹ کروڑوں روپے میں فروخت کیا گیا، پیسے لینے والوں میں پارلیمانی بورڈ کے ممبران سمیت وفاقی وزیر بھی شامل ہیں، انہوں نے کہا کہ عمران خان کو بے خبر رکھ کر کارکنوں کا استحصال کیا گیا جس طرح ٹکٹوں کی بندر بانٹ کی گئی اس کی ماضی میں کوئی مثال نہیں ملتی۔صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے طاہرکھوکھر نے کہا کہ کرپشن کے خلاف عمران خان کے یک نکاتی ایجنڈا اور ریاست مدینہ کے نظریہ سے متاثر ہو کر پی ٹی آئی میں شامل ہوئے تھے لیکن تحریک انصاف نے آزادکشمیر میں سیاست کی ابتداء ہی کرپشن اور نظریاتی کارکنوں کاگلا گھونٹ کر کی ہے جو قابل مذمت ہے۔ انہوں نے کہا کہ آزادکشمیر کے کئی حلقہ جات میں کارکنوں اور پارٹی کے لئے قربانیاں دینے والوں کو نظر انداز کر کے ٹکٹ دیئے گئے اسی طرح مہاجرین حلقوں میں بھی چمک کے تحت ٹکٹ دیئے گئے اور ایک ہی خاندان کو نوازاگیا ایسے لوگوں کو ٹکٹ دیئے گئے جن کا سیاست اور پی ٹی آئی سے کوئی تعلق نہیں۔ عمران خان کے ویژن کے بر خلاف اقرباء پروری کی بدترین مثالیں قائم کی گئیں۔ انہوں نے کہا کہ آج آزادکشمیر میں پی ٹی آئی الیکشن

سے قبل ہی شکست و ریخت کا شکار ہے اور لوگ پی ٹی آئی چھوڑ کر ن لیگ اور پی پی میں شامل ہو رہے ہیں کیونکہ دونوں جماعتوں کی ماضی کی کرپشن پی ٹی آئی کی ٹکٹوں میں کی جانے والی کرپشن سے انہیں کم معلوم ہورہی ہے۔ طاہرکھوکھر نے وزیراعظم پاکستان چیئرمین تحریک انصاف سے اپیل کی کہ آزادکشمیر کے معاملات کا نوٹس لیاجائے اور عوام کی مایوسی کا ازالہ کیا جائے ورنہ تاریخ میں پہلی مرتبہ حکمران جماعت کو آزادکشمیر کے انتخابات میں شکست ہونے جارہی ہے۔جس کی ذمہ داری پارلیمانی بورڈ پر عائدہو گی۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.