ماسکو میں گرمی کا120 سالہ ریکارڈ ٹوٹ گیا

اسلام آباد (مانیٹر نگ ڈیسک/این این آئی )موسمیاتی تبدیلی کی وجہ سے ماسکو میں اس سال گرمی کا 120 سال کا ریکارڈ ٹوٹ گیا۔تفصیلات کے مطابق غیر ملکی خبر ایجنسی کا کہنا ہے کہ روسی دارالحکومت میں در جہ حرارت 34.7 ڈگری سینٹی گریڈ تک جا پہنچا ہے۔

ماسکو میں اتنا زیادہ درجہ حرارت 1901 میں ریکارڈ ہوا تھا۔اتنی زیا دہ گرمی نے عوام کے لئے بھی مسا ئل پیدا کر دئیے ہیں۔گزشتہ سال 2020میں خلیجی ملک بحرین میں 1902 کے بعد قیامت خیز گرمی، 118 سالہ ریکارڈ ٹوٹ گیا تھا، جولائی کے مہینے میں بحرین میں شدید گرمی پڑی جو 1902ء کے بعد سب سے زیادہ گرمی ہے۔ جولائی میں زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت بحرین میں 47 درجے ریکارڈ کیا گیا اور اوسطاً روزانہ کی بنیاد پر درجہ حرارت 42 ڈگری سینٹی گریڈ رہا۔ ‎جبکہ اس قبل 2019میں بھی یورپ میں گرمی کا 500 سالہ ریکارڈ ٹوٹ گیاتھا ، یورپی ملکوں میں ہیٹ ویو کے باعث گرمی کی شدت برقرار ہی۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق فرانس کے دارالحکومت پیرس میں گرمی کا 7 دہائیوں کا ریکارڈ ٹوٹ گیا اور درجہ حرارت 42.6 ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچ گیا جس کے بعد شہر بھر میں ریڈ الرٹ جاری کردیا گیا ہے۔اس کے علاوہ نیدرلینڈز میں بھی شدید گرمی کا راج ہے اور وہاں درجہ حرارت 41 اعشاریہ 7 ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچ گیا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.