مون سون بارشیں برسانے والا سسٹم پاکستان میں داخل آغاز کب سے ہوگا اور یہ سلسلہ کب تک جاری رہے گا؟ محکمہ موسمیات نے پکی پیش گوئی کردی

لاہور (آن لائن، این این آئی ) لاہور سمیت پنجاب بھر میں مون سون کی بارشیں برسانے والا مون سون کا پہلا سسٹم پنجاب میں داخل ہوگیا ہے۔ اس سلسلے میں محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ سسٹم کے داخل ہونے کی وجہ سے جون کے آخری ہفتے میں مون سون بارشوں کا باقاعدہ آغاز ہو جائے گا اور بارشوں کا یہ سلسلہ آئندہ جولائی کے پہلے ہفتے میں بھی

جاری رہے گا۔ محکمہ موسمیات کے مطابق ہفتے کے روز شہر کا موسم گرم اور خشک رہا۔ جس کے باعث تمام دن سورج آگ برساتا رہا اور شہر کا زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 40 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔دوسری جانب تربیلا ، منگلا اور چشمہ کے آبی ذخائر میں پانی کی آمد و اخراج ، ان کی سطح اور بیراجوں میں پانی کے بہائو کی صورت حال حسب ذیل رہی۔دریا ئے سندھ میں تربیلاکے مقام پرآمد 115700کیوسک اور اخرج 155000کیوسک، دریائے کابل میں نوشہرہ کے مقام پر آمد51500کیوسک اور اخراج 51500کیوسک، جہلم میںمنگلاکے مقام پرآمد51500کیوسک اور اخراج15000کیوسک، چناب میں مرالہ کے مقام پر آمد39500کیوسک اور 8800اخراج کیوسک رہا۔جناح بیراج آمد192700کیوسک اور اخراج 184700کیوسک،چشمہ آمد213800کیوسک اوراخراج 193000کیوسک، تونسہ آمد181300 کیوسک اور اخراج152800کیوسک، پنجند آمد12100کیوسک اور اخراج صفر

کیوسک،گدو آمد 143100کیوسک اور اخراج 112200یوسک، سکھر آمد90800کیوسک اور اخراج42500 کیوسک جبکہ کوٹری:آمد28900کیوسک اور اخراج 400 کیوسک ریکارڈ کیا گیا۔تربیلا کا کم از کم آپریٹنگ لیول 1392فٹ،پانی کی موجودہ سطح 1461.00،پانی ذخیرہ کرنے کی انتہائی سطح 1550فٹ اورقابل

استعمال پانی کا ذخیرہ 1.576 ایکڑ فٹ،منگلا کا کم از کم آپریٹنگ لیول 1050فٹ، پانی کی موجودہ سطح 1151.05فٹ،پانی ذخیرہ کرنے کی انتہائی سطح 1242فٹ اور قابل استعمال پانی کا ذخیرہ 1.818 ملین ایکڑ فٹ جبکہ چشمہ کا کم از کم آپریٹنگ لیول 638.15فٹ،پانی کی موجودہ سطح 645.60 فٹ،پانی ذخیرہ کرنے کی انتہائی سطح 649 فٹ اور قابل استعمال پانی کا ذخیر ہ 0.142ملین ایکڑ فٹ رہا۔تربیلا اور چشمہ کے مقامات پر دریائے سندھ، نوشہرہ کے مقام پر دریائے کابل اور منگلا کے مقام پر دریائے جہلم میں پانی کی آمد اور اخراج 24گھنٹے کے اوسط بہائو کی صورت میں ہے ۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.