سپریم کورٹ آف کینیڈا میں پہلے مسلم جج کونامزد کر دیا گیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک/این این آئی )سپریم کورٹ آف کینیڈا میں پہلے مسلم جج کے طور پر نامزد ہونے والے محمود جمال یکم جولائی کو اپنے عہدے کا چارج سنبھالیں گے۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق جسٹن ٹروڈو نے کہا کہ محمود جمال سپریم کورٹ کا ایک قیمتی اثاثہ ہوں گے،

کینیڈا میں نظامی نسل پرستی سے نمٹنے کی ضرورت ہے۔نجی ٹی وی ٹوئنٹی فور کے مطابق ذرائع کے مطابق محمود جمال کینیڈا میں پہلے مسلم جج ہیں،جبکہ 2019ء میں اونٹاریو اپیل کورٹ میں جج بنے تھے۔ خیال رہے کہ کینیڈا کے وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے سپریم کورٹ آف کینیڈا میں پہلا مسلم جج محمود جمال کونامزد کردیا۔ دوسری جانب امریکی سینیٹ نے پہلے مسلم امریکی کی بطور وفاقی جج منظوری دے دی، پاکستانی نژاد زاہد قریشی ڈسٹرکٹ نیوجرسی میں وفاقی جج کی ذمے داریاں نبھائیں گے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق جج زاہد قریشی کو امریکی تاریخ کے پہلے مسلم امریکن وفاقی جج بننے کا اعزاز حاصل ہوگیا، زاہد قریشی کی بطور وفاقی جج نامزدگی وائٹ ہاوس کی طرف سے کی گئی تھی۔نامزدگی سے پہلے زاہد قریشی مجسٹریٹ جج کے طور پر کام کرتے رہے ہیں، زاہد قریشی پہلے ایشیائی امریکی ہیں جو فیڈرل بنچ کا حصہ بنے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.