انجینئرنگ یونیورسٹیز میں داخلے کے خواہشمند طلبا و طالبات کو بڑی رعایت فراہم ، شفقت محمود کی زیر صدار ت اجلاس میں اہم فیصلے

اسلام آباد (این این آئی)وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کی زیر صدار ت اجلاس میں فیصلہ کیاگیا ہے کہ تمام طلبہ جنکا انٹرمیڈیٹ کا امتحان ہو چکا ہوگا یا ابھی ہونا ہوگا، ان سب کو ای کیٹ امتحان/انجینئرنگ کے امتحان میں بیٹھنے کی اجازت ہوگی۔وفاقی وزیر تعلیم و پیشہ وارانہ تربیت شفقت محمود کی زیر صدارت انجینئرنگ یونیورسٹیز میں طلبہ کے داخلے

کو یقینی بنانے کیلئے پاکستان انجینئرنگ کونسل، انجینئرنگ یونیورسٹیز کے وائس چانسلرز اور ایچ ای سی کے اعلی عہدیداروں کا مشاورتی اجلاس ہوا۔کووڈ 19 کی وجہ سے تعلیمی سال اور امتحانات موخر ہونے کے سبب انجینئرنگ یونیورسٹیز میں بروقت داخلے کو یقینی بنانے اور طلبہ کے سال کو ضائع ہونے سے بچانے کے لئے مشاورتی اجلاس میں مختلف آپشنز پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔اجلاس میں متفقہ طور پر طے پایا کہ پاکستان کے تمام طلبہ جنکا انٹرمیڈیٹ کا امتحان ہو چکا ہوگا یا ابھی ہونا ہوگا، ان سب کو ای کیٹ امتحان/انجینئرنگ کے امتحان میں بیٹھنے کی اجازت ہوگی۔اجلاس میں اس بات کو بھی یقینی بنایا گیا کہ کیمبرج کے A2 کے طلبہ جنکا رزلٹ جنوری میں متوقع ہے ، کو بھی ان امتحانات میں بیٹھنے کی اجازت ہو گی اور یونیورسٹیز انکو پروویڑنل ایڈمیشن دیں گی جو کہ انکے فائنل امتحان اور رزلٹ سے مشروط ہوگا پس کسی بھی سٹوڈنٹ کو انجینئرنگ کے امتحان میں بیٹھنے سے روکا نہیں جا سکے گا۔

وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے ایچ ای سی کی مشاورت سے انجینئرنگ یونیورسٹیز اور متعلقہ اتھارٹیز کے اس فیصلے کو سراہتے ہوئے کہا کہ طلبہ اور تعلیمی اداروں کے لئے رواں سال غیر معمولی نوعیت کا سال ہے جس میں ہمیں غیر معمولی فیصلے لینے پڑے ہیں۔ پاکستان انجینئرنگ کونسل اور متعلقہ اتھارٹیز کا وفاقی اور صوبائی حکومتوں کی ڈائریکشن پر طلبہ کو ایسی سہولت کاری مہیا کرنا جس میں کسی طالب علم کا سال ضائع نہ ہو قابل تحسین عمل ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.