احسن اقبال کا متنازعہ بیان ، اوورسیز پاکستانی نے معافی مانگنے اور 2 کروڑ روپے ہرجانے کا نوٹس بھجوا دیا

اسلام آباد(آن لائن)اوورسیز پاکستانی کی طرف سے مسلم لیگ(ن) کے سیکرٹری جنرل احسن اقبال کے حالیہ متنازعہ بیان پر انہیں معافی مانگنے اور 2 کروڑ روپے ہرجانے کا نوٹس بھجوا دیا ہے ۔تفصیلات کے مطابق سپین سے تعلق رکھنے والے محمد عارف تارڑ نے اپنے وکیل کے

ذریعے احسن اقبال کو قانونی نوٹس بھیجا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ بطور سیکرٹری جنرل مسلم لیگ (ن) آپ نے 12 جون کو لاہور میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ملک کے سیاسی و مقامی معاملات کے حوالے سے سمجھ بوجھ سے متعلق اوورسیز پاکستانی کمیونٹی کے خلاف توہین آمیز بیان جاری کیا ۔ اس آپ نے ناانصافی پر مبنی تنقید اور اوورسیز پاکستانیوں کے حوالے سے نفرت کا اظہار کر کے ان کی توہین کی ہے جو کہ اپنے وطن عزیز کی بہتری کے لئے بیرون ملک خدمات سرانجام دے رہے ہیں پاکستانی کمیونٹی ہر سال ملک کی کمزور معیشت کو مدد دینے کے لئے لاکھوں ڈالرز زرمبادلہ کی صورت میں بھیجتی ہے ۔ وہ اس کے عوض نفرت اور اس طرح کے توہین آمیز بیانات کی بجائے بہتر سلوک کی مستحق ہے لیگل نوٹس میں کہا گیا ہے کہ آپ کا بیان مضحکہ خیز ہے اس سے اوورسیز پاکستانیوں کو ذہنی کوفت کا سامنا کرنا پڑا ہے لہذا آپ اپنے بیان پر معافی مانگیں اور 14 روز کے اندر ایڈوانس 2 کروڑ روپے کا ہرجانہ ادا کریں ورنہ آپ کے خلاف قانونی چارہ جوئی کی جائے گی ۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.