مون سون پاکستان میں تباہی پھیلانے کو تیار محکمہ موسمیات نے پیشگی خبر دار کردیا

کراچی،لاہور(این این آئی)محکمہ موسمیات نے سندھ میں تیز ہوائوں، آندھی اور طوفانی بارشوں کی پیش گوئی کر دی۔ محکمہ موسمیات کے مطابق مون سون بارشوں کا سلسلہ 16 جون سے 19 جون تک جاری رہے گا۔محکمہ موسمیات کے مطابق بحیرہ عرب کے شمال سے چلنے والی مون سون ہوائیں 16جون سے سندھ پراثرانداز ہوسکتی ہیں۔ 16سے17جون

کے دوران دادو، سکھر، لاڑکانہ، شکارپور، جیک آباد، گھوٹکی، حیدرآباد، میرپور خاص، عمر کوٹ، تھر، بدین اور ٹھٹھہ ضلع میں گردآلود طوفان کے ساتھ موسلادھار بارش کی توقع ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق کراچی میں 18اور19جون کوگرد آلود ہوائیں اور گرج چمک کے ساتھ معتدل درجے کی بارش کا امکان ہے۔تیز ہوائوں اور گردآلود طوفان کے باعث بل بورڈز گرنے کا خدشہ ہے۔ شہریوں کو طوفان کے دوران احتیاط برتنے کی ہدایت کی گئی ہے۔دوسری جانب تربیلا ، منگلا اور چشمہ کے آبی ذخائر میں پانی کی آمد و اخراج ، ان کی سطح اور بیراجوں میں پانی کے بہائو کی صورت حال حسب ذیل رہی۔دریائوں میں سندھ میں تربیلاکے مقام پرآمد 199000یوسک اور اخرج 135000کیوسک، کابل میں نوشہرہ کے مقام پرآمد73200کیوسک اور اخراج 73200کیوسک، جہلم میں منگلاکے مقام پرآمد69600کیوسک اور اخراج15000کیوسک، چناب میں مرالہ کے مقام پرآمد53400کیوسک اور

23100اخراج کیوسک ۔بیراجوں میں جناح آمد190200کیوسک اور اخراج 182200کیوسک،چشمہ آمد203000کیوسک اوراخراج 193000کیوسک، تونسہ آمد184600 کیوسک اور اخراج157700کیوسک، پنجندآمد10300کیوسک، اور اخراج صفر کیوسک،گدو آمد 106400کیوسک اور اخراج 81500یوسک، سکھر آمد75000

کیوسک اور اخراج31800 کیوسک کوٹری آمد20000کیوسک اور اخراج 400 کیوسک ۔تربیلاکا کم از کم آپریٹنگ لیول 1392فٹ،ریزروائر میں پانی کی موجودہ سطح 1461.96فٹ ریزروائر میں پانی ذخیرہ کرنے کی انتہائی سطح 1550فٹ اورقابلِ استعمال پانی کا ذخیرہ 1.615ملین ایکڑ فٹ۔ منگلاکا کم از کم آپریٹنگ لیول 1050فٹ،ریزروائر

میں پانی کی موجودہ سطح 1142.85فٹ،ریزروائر میں پانی ذخیرہ کرنے کی انتہائی سطح 1242فٹ اور قابلِ استعمال پانی کا ذخیرہ 1.506ملین ایکڑ فٹ۔ چشمہ کا کم از کم آپریٹنگ لیول 638.15فٹ،ریزروائر میں پانی کی موجودہ سطح 645.70 فٹ،ریزروائر میں پانی ذخیرہ کرنے کی انتہائی سطح 649 فٹ اور قابلِ استعمال پانی کا ذخیر ہ 0.145ین ایکڑ فٹ۔تربیلا اور چشمہ کے مقامات پر دریائے سندھ، نوشہرہ کے مقام پر دریائے کابل اور منگلا کے مقام پر دریائے جہلم میں پانی کی آمد اور اخراج 24گھنٹے کے اوسط بہائو کی صورت میں ہے

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.