برڈ فلو انسانوں کو لگنا شروع ہو گیا چائنہ میں پہلا کیس رپورٹ

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک /این این آئی)کرونا وباء کے بعد چین میں برڈ فلو سے انسان متاثر ہونا شروع ہو گئے پہلے کیس کی تصدیق کر دی گئی ہے ۔تفصیلات کے مطابق چینی نیشنل ہیلتھ کمیشن نے بتایا ہے کہ صوبے جیانگسو کے 41 سالہ شخص میں برڈ فلو سے متاثر پہلا مریض رپورٹ ہوا ہے ۔ متاثرہ شخص میں بخار اور دیگر علامات پر 28اپریل کو ہسپتال میں داخل ہوا تھا ۔

رپورٹس کے مطابق28 مئی کو اس شخص میں H10N3 ایوین انفلوئنزا وائرس سے متاثر ہونے کی تصدیق ہوئی۔کمیشن کے مطابق متاثرہ شخص کی حالت اب بہتر ہے اور جلد اسے اسپتال سے ڈسچارج کردیا جائے گا۔دوسری جانب چین کی ریاستی کونسل کے انسداد وبا کے مشترکہ مکینزم کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ چین میں اب تک کورونا وائرس کی وبا کے خلاف ویکسین کی 639 ملین خوراکیں دی جاچکی ہیں جبکہ ویکسی نیشن کا عمل تیز کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔اس وقت تک چین نے پوری دنیا کیلیے کووڈ-19 کے خلاف ویکسین کی 300 خوراکیں فراہم کی ہیں۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق صحت کے قومی کمیشن کے ترجمان می فنگ نے گزشتہ روز منعقدہ پریس کانفرنس میں کہا کہ چین میں ویکسی نیشن کا عمل تیزی سے جاری ہے۔ مئی میں کورونا ویکسین کی یومیہ 12.48 ملین خوراکیں دی گئیں جن میں ایک دن میں سب سے زیادہ دی جانے والی خوراکوں کی تعداد 20 ملین تھی۔کورونا وائرس کی تبدیل شدہ اقسام کے خلاف ویکسین کی استعداد کے بارے میں سائنوفارم چائنا بائیالوجی کے نائب صدر چانگ یون تھاو نے کہا کہ سائنوفارم نے جنوبی افریقہ اور برطانیہ میں رپورٹ ہونے والے تبدیل شدہ وائرسوں (ویریئنٹس)کے خلاف مجموعی آزمائشیں کی ہیں جن کے نتائج سے ظاہر ہے کہ ان کی ویکسین اچھی حفاظت فراہم کرتی ہے۔سائنو فارم کے متعلقہ انچارج نے کہا کہ وہ اچانک سامنے آنے والی نئی اور تبدیل شدہ وائرس کی اقسام کے خلاف نئی ویکسین کی تحقیقات کیلیے تیار ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *