شاہد خاقان عباسی نے شہباز شریف کی مفاہمتی سیاست کو ماننے سے انکار کر دیا

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک /آن لائن)پاکستان مسلم لیگ نواز کے مرکزی رہنما شاہد خاقان عباسی نے قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہبازشریف اگر اداروں سے باہمی مشاورت کی بات کررہے ہیں تو یہ نان اسٹارٹر ہے۔ مسلم لیگ ن کسی سے باہمی مشاورت خود نہیں کرسکتی۔ اگر مشاورت ہوگی تو پاکستان ڈیموکریٹک مومنٹ (پی ڈی ایم) کے پلیٹ فارم سے ہوگی

۔نجی ٹی وی پروگرام بریکنگ پوئنٹ ود مالک میں گفتگو کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ مفاہمت اس سے نہیں ہوتی جو الیکشن چوری کرے اور آئین توڑے۔ مفاہمت کبھی یکطرفہ بھی نہیں ہوتی۔ ہر ادارے کو اپنی آئینی حدود میں رہ کر کام کرنا ہوگا۔شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ شہبازشریف سے اختلاف کروں گا، نوازشریف کے پاوَں پکڑنے کی ضرورت نہیں ہے۔ اگر دلائل ہوں تو نوازشریف کو بڑے بڑے فیصلے بدلتے دیکھا ہے۔انہوں نے کہا کہ شہبازشریف پرانے سیاستدان ہیں۔ آئین کو توڑنا قبول نہیں کرسکتے اس بیانیے میں کوئی اختلاف نہیں۔ چاہتے ہیں کہ اداروں کی عزت رہے اور وہ آئین کے مطابق اپنی حدود میں رہیں۔ چاہتے ہیں کہ ملک کا نظام آئین کے مطابق چلے۔شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ پاکستان کے عوام امید کرتے ہیں کہ کوئی ان کی بات بھی کریگا۔ ہمارے ملک میں الیکشن چوری ہوتے ہیں۔ جس ملک کے الیکشن پر ڈاکا پڑے وہاں الیکشن ریفارمز کیا کریں گے۔سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کیخلاف ایل این جی ریفرنس میں احتساب عدالت نے ایل این جی ریفرنس میں دو غیر ملکی ملزمان کے اشتہار جاری کر دئیے اشتہار میں کیو ای ڈی لندن کے فلپ ناٹمن کو سرنڈر کرنے کی آخری مہلت دی گئی اس کے علاوہ میورک ایڈوائزرز کی چیف ایگزیکٹو ثناء صادق کو بھی پیش ہونے کا آخری موقع دیا گیا عدالتی حکم مطابق دونوں ملزمان 21جون تک پیش نہ ہوئے تو اشتہاری قرار دئیے جائینگے غیر ملکی ملزمان کے وارنٹس کی تعمیل بھی پاکستانی ہائی کمیشن سے کروائی گئی ۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *