اہم عرب ملک نے بھارت،پاکستان،سری لنکا اوربنگلہ دیش سے مسافروں کا داخلہ بند کرنے کا اعلان کردیا

منامہ،ابوظہبی (این این آئی )بحرین نے اپنی سرخ فہرست (ریڈلسٹ)میں شامل کرونا وائرس سے متاثرہ ممالک سے تعلق رکھنے والے مسافروں کے ملک میں داخلے پرعارضی طورپر پابندی عاید کرنے کا اعلان کیا ہے۔بحرین کی سرکاری خبررساں ایجنسی کے مطابق 24 مئی پیر سے بھارت ، پاکستان ، سری لنکا، بنگلہ دیش اور نیپال سے تعلق رکھنے والے

مسافروں کا ملک میں داخلہ معطل کردیاگیاتاہم ان ممالک سے آنے والے بحرینی شہریوں اور اقامتی ویزے کے حاملین پر اس پابندی کا اطلاق نہیں ہوگا لیکن انھیں بحرین کے لیے پرواز میں سوار ہونے سے قبل پی سی آر ٹیسٹ کی منفی رپورٹ دکھانا ہوگی اور بحرین میں آمد کے بعد 10 روز تک قرنطین میں رہنا ہوگا۔دنیا کے دوسرے تمام ممالک سے تعلق رکھنے والے افراد کوبھی بحرین میں آمد کے بعد کروناوائرس سے بچنے کے لیے حفظ تقدم کے طور پر 10 روز تک قرنطین میں رہنا ہوگا۔اس قدغن کا اطلاق ویکسین لگوانے اور نہ لگوانے والے دونوں طرح کے افراد پر ہوگا۔وہ اپنے گھروں میں یا لائسنس یافتہ جگہوں پر 10 روز کے لیے قرنطین کرسکتے ہیں۔دریں اثنا امارت ابوظبی نے اپنی سفری گرین لسٹ (سبزفہرست)پر نظرثانی کی ہے اور اس میں امریکا اور جرمنی سمیت مزید چھے ممالک کو شامل کر لیا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق ابوظبی کی اس فہرست میں شامل ممالک کی تعداد اب انتیس ہوگئی ہے۔ان ممالک سے تعلق رکھنے والے

مسافر متحدہ عرب امارات کے دارالحکومت میں پہنچنے کے بعد لازمی قرنطین سے مستثنی ہوں گے۔انھیں ابوظبی کے ہوائی اڈے پر صرف پی سی آر ٹیسٹ کرانا ہوگا۔ابوظبی کی اس سبز فہرست میں اس وقت آسٹریلیا، آذربائیجان ، بھوٹان ، برونائی دارالسلام، چین، کیوبا، جرمنی ،گرین لینڈ، ہانگ کانگ ، آئس لینڈ، اسرائیل ، جاپان ، کرغیزستان ، موریشس ، مالدووا ،

مراکش ، نیوزی لینڈ ، پرتگال، روس ، سعودی عرب ، سنگاپور ، جنوبی کوریا، اسپین ، سوئٹزرلینڈ ، تائیوان ، تاجکستان ، برطانیہ ، امریکا اور ازبکستان شامل ہیں۔اس فہرست میں پہلے سے شامل ممالک میں سے کسی کا نام حذف نہیں کیا گیا ہے بلکہ جرمنی ، آذربائیجان ، کرغیزستان، اسپین ، مالدووا اور امریکا کو شامل کیا گیا ہے۔دنیا کے جن ممالک کے نام اس فہرست میں شامل نہیں ہیں،ان سے تعلق رکھنے والے افراد کو ابوظبی پہنچنے کے بعد 10 روز تک قرنطین میں رہنا ہوگا اور ابوظبی کے سفر پر روانہ ہونے سے قبل پرواز پر سوار ہوتے وقت پی سی آر کا منفی ٹیسٹ پیش کرنا ہوگا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *