طلبا اور والدین کیلئے بڑی خبر کراچی، لاہور سمیت متعدد شہروں کے سکول 6 جون تک بند وزارت تعلیم نے نئے فیصلوں سے آگاہ کردیا

اسلام آباد ( آن لائن )وزارت تعلیم نے تیسری لہر کے تناظر میں کورونا کیسز میں 5 فیصد سے زیادہ اضافے ہونے پر کراچی، اسلام آباد، لاہور، راولپنڈی، کوئٹہ، پشاور، سوات سمیت دیگر شہروں میں سرکاری اور نجی اسکول 6 جون تک بند کرنے کا فیصلہ کر لیا ۔ترجمان وفاقی وزارت تعلیم کے مطابق ملک کے ان اضلاع میں اسکولز 6 جون تک بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے جہاں کورونا کے کیسز کی شرح 5 فیصد زیادہ ہے نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کے 19 مئی کے فیصلوں کے مطابق جن اضلاع میں بیماری کی شرح

5 فیصد سے کم ہے وہاں تمام سرکاری اور نجی اسکول 24 مئی سے مرحلہ وار کھول دیے جائیں گے جن اضلاع میں کورونا وائرس کی شرح 5 فیصد سے زیادہ ہوگی وہاں اسکولز کی بندش 6 جون تک ہوگی۔ترجمان وزارت تعلیم نے بتایا کہ این سی او سی کورونا سے متعلق 3 جون کو جائزہ اجلاس ہوگا جائزہ اجلاس میں باقی اضلاع کے اسکولز کو 7 جون سے کھولنے کا فیصلہ ہوگا۔ترجمان وزارت تعلیم نے بتایا کہ 52 اضلاع میں کورونا کیسز کی شرح زیادہ ہے ا ن میں آزاد جموں کشمیر کے 4 اضلاع مظفر آباد، پونچھ، باغ اور سدھنوتی شامل ہیں۔ علاوہ ازیں ان کا کہنا تھا کہ صوبہ بلوچستان میں کوئٹہ میں 6 جون تک اسکولز بند رہیں گے۔انہوں نے بتایا کہ پنجاب کے 20 اضلاع میں اسکولز 6 جون تک بند رہیں گے جن میں اٹک، بہاولپور، بھکر، ڈیرہ غازی خان، فیصل آباد، گجرانوالہ، گجرات، خانیوال ، خوشاب، لاہور، لیہ، لودھراں، میانوالی، ملتان، مظفر گڑھ، اوکاڑہ، رحیم یار خان، راولپنڈی، سرگودھا اور ٹوبہ ٹیک سنگھ شامل ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ صوبہ خیبر پختونخواہ میں 14 اضلاع میں 6 جون تک اسکولز بند رہیں گے جن میں ایبٹ آباد، بنوں، بنیر، چارسدہ، دیر لوئر، دیر اپر، ہری پور کوہاٹ، کرم، مردان، نوشہرہ، پشاور، صوابی اور سوات شامل ہیں۔وزارت تعلیم کے مطابق صوبہ سندھ کے 12 اضلاع کے اسکولز 6 جون تک بند رہیں گے جن میں بدین، دادو، حیدر آباد، جامشورو، سکھر، شہید بینظیر آباد اور کراچی کے تمام اضلاع شامل ہیں۔وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے اسکولز بھی 6 جون تک بند رہیں گے۔اس ضمن میں تمام وفاقی اکائیوں کو 21 مئی سے نوٹی فکیشن جاری کرنے کی ہدایات کی گئی ہیں ۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *