چین کی وارننگ کے بعد بٹ کوائن کو بڑا جھٹکا ،قیمت تین ماہ کی کم ترین سطح پر آ گئی

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک /این این آئی)چین کی وارننگ کے بعد بٹ کوائن کو بڑا جھٹکا ،قیمت تین ماہ کی کم ترین سطح پر آ گئی۔غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق 60ہزار ڈالر سے تجاوز کر جانے والے بٹ کوائن کی قیمت اس وقت 40ہزار ڈالر پر ٹریڈ کر رہی ہے جس کی وجہ سے سرمایہ داروں کی ناقابل یقین نقصان برداشت کرنا پڑا ہے ۔ یاد رہے کہ چین نے گزشتہ دنوں اپنے

سرمایہ داروں کو متنبہ کیا تھا کہ وہ کریپٹو کرنسی میں سٹے بازی سے باز رہیں۔واضح رہے کہ گزشتہ ماہ بٹ کوائن کریش کر گیاتھا جس سے سرمایہ کاروں کے کھربوں روپے ڈوب گئے، میڈیا ذرائع کے مطابق ڈیجیٹل کرنسی بٹ کوائن تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچنے کے بعد اچانک 15 ہزار ڈالر سستا ہو گیا ہے۔ بٹ کوائن مارچ 2021ء کے بعد پہلی مرتبہ 50 ہزار ڈالر سے نیچے آ گیا ہے۔ بٹ کوائن کی قیمت 48500 ڈالر تک گر گئی۔پاکستانی کرنسی میں اس وقت بٹ کوائن کی قیمت 77 لاکھ روپے ہے۔دوسری جانب یورپی ممالک بٹ کوائن کے متبادل کے طور پر نئی ڈیجیٹل کرنسی متعارف کرانے پر غور کررہے ہیں۔غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق کرپٹو کرنسی بٹ کوائن کی بڑھتی مقبولیت کو مدنظر رکھتے ہوئے یورپی ممالک کے مختلف بینکس اپنی ڈیجیٹل کرنسی متعارف کرانے کا منصوبہ بنا رہے ہیں۔بٹ کوائن کے مقابلے میں ڈیجیٹل یورو، یو آن یا ڈالر متعارف کرانے پر غور کیا جا رہا ہے۔یورپ کی سب سے بڑی اقتصادی قوت جرمنی، یورپین سنٹرل بینک کی ضمانت سے ڈیجیٹل یورو متعارف کرانے پر غور کر رہا ہے، ڈیجیٹل یورو کو کمرشل بینکوں کے مقابلے میں زیادہ تحفظ ملے گا۔ تاہم نئی ڈیجیٹل کرنسی کے حوالے سے اب تک کوئی حتمی فیصلہ یا اعلان نہیں کیا گیا ہے۔خیال رہے کہ بٹ کوائن کے متعارف ہونے کے 13 سال بعد اس کرپٹو کرنسی کی مارکیٹ 20 کھرب ڈالرز تک پہنچ گئی ہے، ایک بٹ کوائن کی قدر 60 ہزار ڈالر ریکارڈ کی گئی۔دوسری جانب برطانیہ بھی بٹ کوائن کے متبادل کے طور پر برٹ کوائن لانے پر غور کررہا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.