حکومت کا عالمی بینک اور ایشیائی ترقیاتی بینک سے 20 ارب ڈالر قرض لینے کا فیصلہ

اسلام آباد (این این آئی) وزیر خزانہ شوکت ترین نے کہا ہے کہ حکومت آئندہ مالی سال میں شرح نمو بڑھانے کیلئے 900 ارب روپے کے ترقیاتی اخراجات کرے گی۔وزیر خزانہ شوکت ترین نے عالمی خبر رساں ایجنسی بلوم برگ کو انٹرویو دیتے ہوئے کہاکہ حکومت آئندہ مالی سال میں شرح نمو بڑھانے کیلئے 900 ارب روپے کے ترقیاتی

اخراجات کرے گی۔ انہوں نے کہاکہ عالمی بینک اور ایشیائی ترقیاتی بینک سے 20 ارب ڈالر حاصل کریں گے، کورونا سے متاثرہ معیشت کی فوری بحالی کیلئے حکومت اقدامات لے گی۔ انہوں نے کہاکہ اگر زرعی اور صنعتی پیداوار نہ بڑھائی گئی تو مستقبل میں سڑکوں پر مظاہرے شروع ہو جائیں گے۔ انہوں نے کہاکہ بڑھتی آبادی کے باعث ملک میں ہر سال روزگار کے 20 لاکھ نئے مواقعے فراہم کرنا ہوں گے،شرح نمو اور روزگار کے مواقعے بڑھانے کیلئے حکومت آئندہ مالی سال بڑے انفراسٹرکچر منصوبوں میں سرمایہ کاری بڑھائے گی۔انہوں نے کہاکہ آئندہ مالی سال کیلئے شرح نمو کا ہدف 5 فیصد رکھا جائے گا، رواں مالی سال کا بجٹ خسارہ 7 فیصد تک رہنے کا امکان ہے۔ انہوں نے کہاکہ آئندہ مالی سال ٹیکس وصولیوں کو بڑھا کر 6 ہزار ارب روپے سے زیادہ کیا جائے گا، آئی ایم ایف کے اہداف حاصل کرنے کیلئے متبادل ذرائع استعمال کیے جائیں گے۔ انہوں نے کہاکہ آئی ایم ایف کو محصولات اور بجلی کے شعبے میں اصلاحات پر متبادل ذرائع پر اعتماد میں لیں گے، آئی ٹی برآمدات کو دو سال میں 2 ارب ڈالر سے بڑھا کر 8 ارب ڈالر کیا جائے گا۔  وزیر خزانہ شوکت ترین نے کہا ہے کہ حکومت آئندہ مالی سال میں شرح نمو بڑھانے کیلئے 900 ارب روپے کے ترقیاتی اخراجات کرے گی۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.