بے قابو چینی راکٹ گر گیا

بیجنگ(این این آئی/آن لائن) بے قابو چینی راکٹ مالدیپ کے قریب بحر ہند میں گر گیا۔چینی میڈیا کے مطابق چین کا 21 ٹن وزنی راکٹ کا ملبہ بحرہند میں مالدیپ کے قریب گر گیا ہے۔ راکٹ کا کافی ملبہ فضا میں ہی جل گیا تھا۔لانگ مارچ 5B نامی یہ راکٹ چینی خلائی اسٹیشن کے لیے سامان کی ترسیل کے بعد واپس آتے ہوئے کنٹرول سے باہر ہو گیا تھا۔چینی وزارت خارجہ نے یقین دہانی کرائی تھی کہ

راکٹ کا بیشتر ملبہ زمین پر داخلے سے قبل ہی جل کر خاک ہو جائے گا اور اس سے کسی نقصان کا اندیشہ نہیں ہے۔سائنسدانوں کے مطابق اب تک کے ڈیٹا کے حساب سے راکٹ کے ملبے کے گرنے کا مقام نیوزی لینڈ کے نارتھ آئی لینڈ کے قریب ہے۔لانگ مارچ 5B نامی اس راکٹ میں چینی خلائی اسٹیشن کے لیے سامان موجود تھا۔‎۔ چین کا بے قابو راکٹ زمین پر کہاں گرے گا، اس حوالے سے روسی سپیس ایجنسی نے ممکنہ مقامات کا نقشہ جاری کردیاہے، ایجنسی نے جنوبی ایشیا کے ممالک کو بھی خبردار کردیا ہے، سپیس ایجنسی کا کہنا ہے کہ امریکہ، لاطینی امریکہ، افریقہ یا آسٹریلیا بھی راکٹ گرنے کے ممکنہ مقام ہوسکتے ہیں۔ماہرین کے مطابق بائیس ٹن وزنی راکٹ 7 کلو میٹر فی سیکنڈ کی رفتار سے حرکت کر رہا ہے جس کا اتوار کی صبح زمین پر گرنے کا خدشہ ہے۔ تاہم چینی حکومت نے کہا ہے کہ اس سے کسی نقصان کا خطرہ نہایت کم ہے۔ ملکی خبر رسا ں ادارے کے مطابق چین کا لونگ مارچ فائیو بی راکٹ 29 اپریل کو زمین کے مدار میں بھیجا گیا تھا۔ راکٹ کا ایک 18 ٹن وزنی مرکزی ٹکڑا تاہم بے قابو ہے اور معلوم نہیں کہ کس مقام سے زمینی کرہ ہوائی میں داخل ہو رہا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ یہ ٹکرا ہفتے کی شب عالمی وقت کے مطابق تقریباگیارہ بجے کے لگ بھگ زمینی کرہء ہوائی میں داخل ہو گا۔ چینی وزارت خارجہ کے ایک ترجمان نے تاہم کہا ہے کہ زمینی کرہ میں داخلے پر اس راکٹ جل کر خاکستر ہو جائے گا اور اس سے کسی نقصان کا اندیشہ نہایت کم ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.