جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کیس کے حوالے سے کبھی بھی بشیر میمن سے کوئی بات چیت نہیں ہوئی وزیر قانون فروغ نسیم نے بھی خاموشی توڑ دی

اسلام آباد (این این آئی)وزیر قانون فروغ نسیم نے سابق ڈی جی یف آئی اے بشیر میمن کے الزامات کی تردید کرتے ہوئے کہاہے کہ جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کیس کے حوالے سے کبھی بھی بشیر میمن سے کوئی بات چیت نہیں ہوئی۔ اپنے بیان میں فروغ نسیم نے کہا کہ بشیر میمن کے بے بنیاد الزامات کی تردید کرتا ہوں، قاضی فائز عیسیٰ کیس کے حوالے سے کبھی بھی بشیر میمن سے کوئی

بات چیت نہیں ہوئی۔ انہوں نے کہاکہ اعظم خان، شہزاد اکبر اور بشیر میمن کبھی اکٹھے میرے دفتر نہیں آئے۔ انہوں نے کہاکہ اعظم خان صرف ایک مرتبہ میرے دفتر آئے تاکہ قانونی اصلاحات کے متعلق تبادلہ خیال کریں۔ انہوں نے کہاکہ وزیر اعظم عمران خان، اعظم خان اور شہزاد اکبر نے مجھ سے اس بارے میں کبھی بات نہیں کی کہ انہوں نے جسٹس عیسی کیس پر بشیر میمن سے کوئی بات کی ہو۔دوسری جانب وزیراعظم کے مشیر برائے احتساب وداخلہ بیرسٹر شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ بشیرمیمن کو جسٹس قاضی فائزعیسیٰ کے معاملے پروزیراعظم یا مجھ سے ملاقات کیلئے کبھی نہیں بلایا گیا۔ سابق ڈی جی ایف آئی اے بشیر میمن کے الزامات پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ٹی وی پروگرام میں بشیر میمن نے جھوٹ پر مبنی گفتگو کی ،جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کے معاملے پر کبھی بھی وزیر اعظم یا میں نے بشیر میمن کو کسی ملاقات کے لئے نہیں بلایا ۔ انہوں نے کہاکہ بشیر میمن کو کبھی بھی کسی خاص فرد کے خلاف کوئی مقدمہ شروع کرنے کا نہیں کہا گیا۔شہزاد اکبرنے کہا کہ ایف آئی اے کو صرف بغاوت کاایک کیس بھیجنے کا فیصلہ کابینہ کا تھا۔انہوں نے کہاکہ میں نے ذاتی حیثیت میں وکلاء کو بشیر میمن کیخلاف اس بہتان طرازی پر قانونی کارروائی کی ہدایت کی ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *