جنوبی افریقا کرکٹ ٹیم کے کھلاڑی نے اہلیہ کے ہمراہ اسلام قبول کر لیا

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )جنوبی افریقا کرکٹ ٹیم کے کھلاڑی نے اہلیہ کے ہمراہ اسلام قبول کر لیا۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق افریقن کھلاڑی بیجورن فورٹن نے گزشتہ رات اپنی اہلیہ کےہمراہ اسلام قبول کر لیا اور اپنا اسلامی نام عماد رکھا ۔ جنوبی افریقی کرکٹر تبریز شمسی اور ان کی اہلیہ نے جوڑے کو دائرہ اسلام میں داخل ہونے پر مبارکباد دی ۔ نجی ٹی وی جیو کے مطابق بیجورن

اور ان کی اہلیہ مشکی ایسن نے اسے شیئر بھی کیا۔26 سالہ کرکٹر بیجورن فورٹن نے ستمبر 2019 میں جنوبی افریقا ٹیم کے لیے عالمی سطح پر ڈیبیو کیا تھا۔خیال رہے کہ بیجون جنوبی افریقا کرکٹ ٹیم کے دوسرے کھلاڑی ہیں جنھوں نے اسلام قبول کیا ہے، اس سے قبل میڈیم فاسٹ بولر پارنیل بھی 2011 میں اسلام قبول کرچکے ہیں۔یاد رہے کہ اس سے قبل نیشنل باسکٹ بال ایسوسی ایشن کےسابق کھلاڑی اسٹیفن جیک سن نے اسلام قبول کیا تھا ۔غیرملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق اسٹیفن جیک سن نے باضابطہ طور اسلام قبول کرنے کا اعلان کیا ۔ انھوں نےانسٹاگرام پر قبول اسلام کی ویڈیو شئیر کی اور انتہائی مسرت کا اظہار کیا 42 سالہ اسٹیفن جیک سن باسکٹ بال سے 2015 میں ریٹائر ہوئے تھے۔ اسٹیفن جیک سن نے نیشنل باسکٹ بال ایسوسی ایشن میں 14 سیزن نمائندگی کی۔دوسری جانب ہالینڈکی باکسنگ سٹار نے اسلام قبول کر لیا۔تفصیلات کے مطابق ہالینڈ کی باکسنگ سٹار روبی جیسہا میسو نے عیسائی خاندان میں آنکھ کھولی انہوں نے کچھ سال قبل دین اسلام کا مطالعہ شروع کیا اور ان پر عمل پیرا ہونا شرو ع ہو گئیں، اسلامی تعلیمات کے اثر نے انہیں اسلام قبول کرنے کیلئے آمادہ کیا۔ انہوں نے ہالینڈ کی ایک مسجد میںگواہوں کی موجودگی میں کلمہ شہادت پڑھ کر اسلام قبول کیا۔ باکسنگ سٹار کو دین اسلام قبول کرنے کے بعد مسلمانوں کی جانب سے مبارکباد کے پیغام موصول رہے ہیں، روبی کو کِک باکسر اور ”دی لیڈی ٹائیسن“ بھی کہا جاتا ہے۔ان کی حجاب میں کچھ تصاویر وائرل ہو رہی ہیں اورمسلم کمیونٹی کی جانب سے انہیں مبارکباد کیساتھ ساتھ سراہا جارہا ہے۔ دوسری جانب اس سے قبل مشہور جرمن باکسر ول ہیلیم اوٹ نے اسلام قبول کیا تھا۔ مشہور جرمن باکسر ول ہیلیم اوٹ نے لاک ڈاؤن کے دوران اسلام قبول کرنے کا اعلان کیاتھا۔مارشل آرٹس میں یورپین چیمپیئن شپ کا ٹائٹل جیتنے والے جرمن باکسر نے اسلام قبول کرنے کے اعلان کے موقع پر اپنے ایک ویڈیو پیغام میں کہا تھا کہ کورونا وائرس کے باعث ہونے والے لاک ڈاؤن نے مجھے اس مذہب کو جاننے کا موقع دیا جس کے بعد میں نے اسلام قبول کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ویڈیو میں جرمن باکسر نے کلمہ طیبہ بھی پڑھا اور اللہ اکبر کا نعرہ بھی لگایا۔سوشل میڈیا پر جرمن باکسر کو اسلام قبول کرنے پر مبارکباد دی جا رہی ہے اور دعائیں بھی دی جا رہی ہیں کہ وہ دین اسلام کو اپنے لوگوں میں پھیلانے کا سبب بنیں گے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *