مولانا فضل الرحمن نے خودمبینہ طور پر میاں نوازشریف اور لوٹی ہوئی دولت کو ہی ’’مائی باپ‘‘ کا درجہ دے چکے، حیرت انگیز دعویٰ

کوئٹہ/کراچی(این این آئی) جمعیت علماء اسلام پاکستان کے سینئر رہنما اور ممتازپارلیمنٹرین حافظ حسین احمد نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن کا یہ کہنا کہ ’’ان کو توقع نہیں تھی کہ پیپلزپارٹی والے ’’باپ‘‘کو اپنا ’’باپ‘‘ بنائیں گے اس سے بڑی گالی پیپلزپارٹی کو نہیں دی جاسکتی۔ وہ منگل کو اپنی رہائشگاہ جامعہ مطلع العلوم میں میڈیا سے گفتگو کررہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم کے

سربراہ مولانا فضل الرحمن نے خودمبینہ طور پر میاں نوازشریف اوراس کی ملک سے لوٹی ہوئی دولت کو ہی ’’مائی باپ‘‘ کا درجہ دے چکے ہیں جبکہ باقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت پیپلزپارٹی اور اے این پی کو دیوار کے ساتھ لگانے کی سازش کی گئی تاکہ ان کے علاوہ باقی پارٹیوں کا مستقبل قریب میں انتخابی اتحاد بنایا جاسکے ، انہوں نے کہا کہ استعفوں سے متعلق پیپلز پارٹی کے واضح موقف کے علم کے باوجود مارچ کی 26تاریخ کو ’’طے شدہ مارچ ‘‘کو 16مارچ کو ہی استعفوں سے نتھی کیا گیا تاکہ ’’لانگ مارچ‘‘ کے التوا کو پیپلز پارٹی کے خلاف استعمال کیا جاسکے لیکن شاہد خاقان عباسی کے شوکاز نوٹس نے سارا منصوبہ خاک میں ملادیا، ایک سوال کے جوا ب میں انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے سرتھوپنے کی سازش نہ صرف ناکام رہی بلکہ خود ان کے اپنے گلے پڑ گئی، انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم کو شریف خاندان کی جاگیر بنانے کی کوشش کی جارہی ہے اوردیگر جماعتوں کو شریف خاندان کی چوری کا وکیل صفائی بنانے کی منصوبہ بندی کی گئی ہے لیکن پیپلز پارٹی اور اے این پی ان تمام سازشوں کو بھانپ گئی اور ان کے تمام سازشوںاور منصوبہ کو مٹی میں ملا دیا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *