مہنگائی بڑھی تو طوفان برپا ہوا اور اب قیمتیں کم ہوئیں ہیں تو کوئی تذکرہ ہی نہیں کر رہا

لاہور(آن لائن) وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ مہنگائی بڑھی تو طوفان برپا ہوا لیکن قیمتیں کم ہوئیں تو کوئی تذکرہ نہیں، مہنگائی کنٹرول کرنے کے حوالے سے حکومت پنجاب نے جو اقدامات اٹھائے ہیں انہیں اجاگر کیا جائے۔وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ اشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں کمی کرکے مہنگائی کنٹرول کی جائے، چینی مقرر کردہ قیمت پرفروخت کی جائے،

مصنوعی مہنگائی کے ذمہ داروں کیخلاف زیرو ٹالرنس پالیسی اپنائی جائے، ذخیرہ اندوزوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت لاہور میں پرائس کنٹرول کمیٹی کا اجلاس ہوا۔وزیراعظم کو مہنگائی سے متعلق بریفنگ دی گئی۔ وزیراعظم کو بتایا گیا کہ پنجاب میں 7 ارب کی لاگت سے 313 سہولت رمضان بازار قائم کیے جائیں گے۔ صوبائی وزراء کی مختلف اضلاع کا دورہ کرنے کیلئے ڈیوٹیاں لگا دی گئی ہیں۔ وزیراعظم عمران خان نے ہدایت کی ہے کہ اشیائے خوردونوش کی دستیابی کی کمی نہیں ہونی چاہیے۔رمضان بازاروں اور مارکیٹوں میں چینی مقرر کردہ ریٹ پر دستیاب ہونی چاہیے۔انہوں نے کہا کہ ذخیرہ اندوزوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے۔ مصنوعی مہنگائی پیدا کرنے والوں سے متعلق زیرو ٹالرنس پالیسی اپنائی جائے۔ وزیراعظم نے پنجاب بینک کے صدر ظفر مسعود کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب بینک نے باقی بینکوں سے آگے بڑھ کر کام کیا ہے، بڑا فیسی لیٹیٹ کیا۔ بینکنگ میں بھی لیڈر شپ چاہیے، ہر بینک کے ہیڈ میں وڑن نہیں ہوتا۔آؤٹ اسٹینڈنگ بینکرز سمجھتے ہیں معیشت بڑھنے سے سب کا فائدہ ہوگا، بینک کا بھی فائدہ ہوگا۔ آؤٹ اسٹینڈنگ بینکرز میں مجھے بینک آف پنجاب سب سے آگے نظر آرہا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.