اسٹیل مل انتظامیہ نے قیمتی سازوسامان محفوظ کرنے کے بہانے اسکریپ کے نام پر قیمتی کاپراور خام لوہے کی فروخت شروع کردی

کراچی(این این آئی)اسٹیل مل کی انتظامیہ نے ادارے میں چوری کے واقعات چھپانے اور قیمتی ساز و سامان محفوظ کرنے کے بہانے اسکریپ کے نام پر قیمتی کاپر اور خام لوہے کی فروخت شروع کردی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق اسٹیل مل میں آکسیجن پلانٹ کے اطراف موجود قیمتی کاپر اور خام لوہا من

پسند افراد کو فروخت کیا جارہا ہے اور ٹنوں کی مقدارسے یہ قیمتی سامان ٹرکوں میں لوڈ کرکے اسٹیل مل سے باہر لے جایا جارہا ہے جبکہ یہ سارا عمل اسٹیل مل کے شعبہ سیکیورٹی کی نگرانی میں کیا جا رہا ہے۔ذرائع کے مطابق من پسند افراد کو اسٹیل مل سے قیمتی کاپر،شیٹیں اور خام لوہا ٹنو ں کے حساب سے فروخت کیا جارہا ہے جبکہ اس حوالے سے کسی قسم کی انٹری یا ریکار ڈ بھی نہیں رکھا جارہا ،اسٹیل مل میں گزشتہ چند دنوں سے چوری کے واقعات میں بے پناہ اضافہ ہوگیا ہے جبکہ ادارے کی سیکیورٹی ان واقعات پر قابو پانے میں مکمل طور پر ناکام ہوگئی ہے ۔ اسٹیل مل ایمپلائز ایکشن کمیٹی ،سی بی اے اور اسٹیک ہولڈرز گروپ نے ادارے سے انتظامیہ کی سرپرستی میں قیمتی ساز و سامان کی چوری پر شدید تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے سپریم کورٹ سے از خود نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ،اسٹیل مل ایمپلائز ایکشن کمیٹی کے رہنمائوں نے کہاکہ سیکیورٹی ڈپارٹمنٹ سے ملازمین کی جبری برطرفیاں انہیں مذموم مقاصد کے حصول کیلئے کی گئی تھیں، مل میں بھاری مشاہروں پر سیکیورٹی افسران اور ملازمین کے باوجود چوری کے بڑھتے واقعات کسی اور جانب ہی اشارہ کرتے ہیں،اسٹیل مل کی نجکاری سے قبل اس کے اثاثہ جات کو ٹھکانے لگایا جارہا ہے اور ہم سپریم کورٹ اور حکومت سے ان واقعات کا نوٹس لینے اور ذمہ داران سے باز پرس کرنے کا مطالبہ کرتے ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.