نیب کی درخواست مسترد لاہور ہائیکورٹ نے پیشی سے ایک دن قبل مریم نواز کوبڑا ریلیف دیدیا

لاہور(این این آئی) لاہور ہائیکورٹ نے مسلم لیگ(ن ) کی نائب صدرمریم نواز کو کارکن ساتھ لانے پر پابندی کیلئے نیب کی استدعا مسترد کر دی۔ جسٹس سرفراز ڈوگر نے ریمارکس دیئے کہ ریاست کی ذمہ داری ہے حالات کنٹرول کرے۔ لاہور ہائیکورٹ میں مریم نواز کو نیب پیشی پر کارکنوں کو ساتھ لانے پر پابندی کیلئے درخواست پر سماعت ہوئی۔

عدالت نے ریمارکس دیئے کہ نیب لاہور ہائیکورٹ سے کیوں ریلیف مانگ رہا ہے ؟ اس معاملے میں کیوں پڑیں، یہ سیاسی معاملہ ہے، نیب کی درخواست پر کیسے اور کیوں رٹ جاری کریں ؟ قانون پر عمل کرنا ہر شہری کی ذمہ داری ہے، کوئی قانون کی پاسداری نہیں کرے گا تو قانون اپنا راستہ بنائے گا۔ لاہورہائیکورٹ نے نیب کی درخواست نمٹا دی۔یاد رہے کہ مریم نواز کی کل نیب لاہور میں پیشی ہے ، دوسری جانب مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ ،چور چور کے نعرے لگانے والے ملک کو کہاں لے گئے،کرائے کے ترجمان آج کل اخلاقیات دوستی کی بات کرتے ہے،انکو پتا ہوتا ہے کہ کب سٹیٹ بنک جیسے اداروں کو گروی رکھنا ہوتا ہے،سٹیٹ بنک کو آئی ایم ایف میں گروی رکھوانے کے خلاف مکمل جنگ کریں گے۔ مےڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ شہباز شریف کی جیل میں اپنی میڈیکل رپورٹس ہی نہیں دی جاتی،ایک مہینے پہلے ٹیسٹ ہوئے اور ابھی تک انکی میڈیکل رپورٹ نہیں دی گئی،شہباز شریف کے خلاف جب کوئی کرپشن نہیں ملی

تو میڈیکل رپورٹ چھپا لی،یہ وہ چور ہیں جو چوری کر ہے ہیں،جو خود چور ہیں وہ مہنگائی کو 3 سے 16 فیصد پر لے گئے،گیس کی قیمت پر 800 سے 1400 تک لے گئے،14 ہزار ارب روپے کا قرضہ لے کر ریکارڈ بنا لیا،چور چور کے نعرے لگانے والے ملک کو کہاں لے گئے۔انہوں نے کہاکہ کاغذلہرانے والا ٹائوٹ وفاق میں نہیں جا سکتا، دوسروں پر الزام لگاتا ہے ۔سٹیٹ بنک کو آئی ایم ایف میں گروی رکھوانے کے خلاف مکمل جنگ کریں گے۔22 کروڑ عوام کو آئی ایم ایف غلام بنانا چاہتے ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.