کرپشن ثابت ہونے پر احتساب عدالت کا بڑا فیصلہ کسٹم آفیسر افتخار چیمہ کو 10سال قید ،6کروڑ روپے جرمانہ تمام اثاثہ جات ضبط ،سرکاری عہدہ کیلئے بھی نا اہل قرار

لاہور(این این آئی)احتساب عدالت نے کرپشن ثابت ہونے پر کسٹم آفیسر افتخار احمد چیمہ کو 10سال قید ،6کروڑ روپے جرمانے اور کرپشن کی رقم سے بنائے گئے اپنے اوراہلیہ کے نام تمام اثاثہ جات بحق سرکارضبط کرنے کافیصلہ سنا دیا ۔

فیصلہ لاہور کی احتساب عدالت نمبر 4 کے جج سجاد احمد نے جاری کیا ۔احتساب عدالت نے ہدایت کی ہے کہ ملزم کی جانب سے جرمانہ ادا نہ کرنے کی صورت میں ملزم کے نام موجود دیگر اثاثہ جات کو بھی بحق سرکار ضبط کرلیا جائے۔ملزم افتخار احمد کو سزا مکمل ہونے کے 10 سال بعد تک کسی بھی سرکاری عہدہ کیلئے نااہل قرار دیدیا گیا ہے۔ملزم کیخلاف جاری فیصلہ کے مطابق ملزم افتخار احمد کو اگلے 10 سال تک کسی بھی سرکاری یا نیم سرکاری بینک سے مالی قرض یا لین دین کیلئے بھی نااہل قرار دیا گیا ہے۔معزز احتساب عدالت نے ملزم افتخار احمد چیمہ کو فوری طور پر سینٹرل جیل لاہور منتقل کرنے کے احکامات صادر کئے ہیں۔نیب لاہور نے ملزم کیخلاف تحقیقات مکمل کرتے ہوئے 2017 میں کرپشن ریفرنس احتساب عدالت کے روبرو دائر کیا۔ترجمان کے مطابق نیب لاہور کا 2020 کے دوران ملزمان کو سزائیں دلوانے کا مجموعی تناسب 78 فیصد رہا ہے۔چیئرمین نیب جسٹس (ر)جاوید اقبال کی واضح ہدایات ہیں کہ بدعنوانی کے تمام مقدمات میں ٹھوس شواہد پر مبنی ریفرنس معزز عدالتوں میں دائر کئے جائیں ۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.