اسلام آباد میں 2 ارکان کی 4کروڑ میں ڈیل طے ،حیرت انگیز انکشافات

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک/این این آئی )تحریک انصاف کے رکن صوبائی اسمبلی عبد السلام آفریدی نے سینیٹ ووٹ کی خریداری کی پیش کش کی تصدیق کردی۔عبدالسلام آفریدی کا کہنا تھا کہ ’مجھے سینیٹ الیکشن کے لیے خریدنے کی کوشش کی گئی‘۔نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ پاکستان پیپلزپارٹی کے رکن اسمبلی احمد کنڈی نے

لیگی امیدوار عباس آفریدی کے گھر بلایا اور مجھے 8 کروڑ روپے کی پیش کش کی۔عبدالسلام آفریدی کا کہنا تھا کہ ’میں نے پیش کش کو مسترد کیا تو احمد کنڈی نے بتایا کہ دو اراکین اسمبلی سے اسلام آباد میں بات چیت طے ہوگئی ہے۔تحریک انصاف کے رکن اسمبلی کا کہنا تھا کہ ’احمد کنڈی نے بتایا کہ اسلام آباد میں دو اراکین سے چار کروڑ میں ڈیل طے ہوئی ہے، ہم آپ کو دس کروڑ روپے ادا کریں گے‘۔احمد کنڈی نے بتایا کہ میں نے پیش کش مسترد کی تو واٹس ایپ پر رابطہ کیا گیا، جس کے بعد میں نے چیٹ کو محفوظ کیا اور سارے معاملے سے پارٹی قیادت کو آگاہ کیا۔واضح رہے کہ آج سینیٹ الیکشن کے حوالے سے آراکین اسمبلی کی خرید و فروخت کی ویڈیو، آڈیو اور واٹس ایپ پیغامات تفصیلات سینئر صحافی ارشد شریف جاری کرچکے ہیں۔ دوسری جانب سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کے صاحبزادے علی حیدر گیلانی نے منظر عام پر آنے والے ویڈیو کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ویڈیو میری ہے، جس میں سینیٹ الیکشن پر بات ہورہی ہے۔ شازیہ مری کے ہمراہ پریس کانفرنس میں علی حیدر گیلانی نے کہا کہ وڈیو میں میری گفتگو سب کے سامنے ہے۔انہوں نے کہا کہ عمران خان صاحب نے جس طرح ووٹ خریدا وہ سب کے سامنے ہے، ہم نے ضمیر کا ووٹ مانگا ہے، جو ہم نے ساری زندگی مانگا ہے۔سابق وزیراعظم کے صاحبزادے نے کہا کہ ہم نے کبھی ووٹوں کی خرید و فروخت میں حصہ نہیں ڈالا، تمام ممبران اسمبلی سے ووٹ مانگنا ہمارا حق ہے۔اْن کا کہنا تھا کہ انہوں نے مجھے کہا کہ ہم ووٹ گیلانی صاحب کو دینا چاہتے ہیں، پی ٹی آئی ارکان نے دوران گفتگو کہا کہ ہم ایسے فرد کو ووٹ کیوں دیں جو ہم سے ملتا تک نہیں ہے۔علی حیدر گیلانی نے کہا کہ ہم نے پھر بھی ملنا ہے اور ووٹ بھی مانگنا ہے، عمران خان نے اپنے تمام اراکین کو 50 کروڑ روپے کے فنڈز جاری کیے۔انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن کو وزیراعظم عمران خان کے اس اعلان پر نوٹس لینا چاہیے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.