ن لیگ کے کارکن پولنگ اسٹیشن میں دروازہ توڑ کر داخل ہو گئے، مریم نواز کا بھی حیرت انگیز موقف

لاہور(آن لائن) مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا ہے کہ ڈسکہ میں پولنگ اسٹیشن پر گھنٹوں انتظار کے باوجود پولنگ اسٹیشن کے دروازے نہیں کھولے گئے۔ جاری بیان کے مطابق انہوں نے کہا کہ ووٹرز کو بے وقوف بنایا گیا، یہاں تک کہ پولنگ کا وقت ختم ہونے کے قریب پہنچ گیا جس پر ن لیگ کے کارکنوں کا صبر جواب دے گیا

اور ن لیگ کے کارکنوں نے احتجاج کیا اورکارکن دروازہ توڑ کر اندر داخل ہو گئے۔مریم نواز کا کہنا تھا کہ انتظامیہ اس صورتحال پر شرم کرے۔دوسری جانب پنجاب اور خیبر پختونخوا میں قومی اور صوبائی اسمبلیوں کے 4 حلقوں میں ضمنی انتخابات کے دوران فائرنگ تلخ کلامی، تکرار، دھکم پیل اور بدنظمی کے واقعات میں 2 افراد جاں بحق اور دیگر 7 زخمی ہوگئے۔ سیالکوٹ کے علاقے ڈسکہ کے پولنگ اسٹیشن گوئندکے میں مسلح افراد نے فائرنگ کی جس کے نتیجے میں پاکستان مسلم لیگ (ن) اور پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) سے تعلق رکھنے والے دوکارکن دم توڑ گئے۔پولیس کی بھاری نفری علاقے میں تعینات کر دی گئی جبکہ عینی شاہدین نے کہا کہ علاقے میں اسلحے کی سرعام نمائش ہوتی ہے اور کہیں بھی قانون کی بالادستی نظر نہیں آئی۔این اے-75 سیالکوٹ کے ضمنی انتخابات میں فائرنگ کا الزام حکمران جماعت پی ٹی آئی اورمسلم لیگ (ن) نے ایک دوسرے پر عائد کیا۔ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے ٹوئٹر پر کہا کہ ‘میں مسلم لیگ ن کے، خصوصاً ڈسکہ، وزیرآباد اور نوشہرہ کے ورکرز سے درخواست کرتی ہوں کہ آج آپ نے پی ٹی آئی کے حکومتی اراکین اور پولیس کی کھلم کھلا غنڈہ گردی اور دھاندلی کے باوجود جس جرآت بہادری اور عزم سے ووٹ ڈالا ہے، اب اسی جرات

اور بہادری سے اپنے ووٹ پر پہرہ بھی دیں اور اس کی حفاظت کریں ‘۔ان کا کہنا تھا کہ ‘کارکنان ووٹوں کی گنتی اور بیلٹ باکس کی ترسیل کے دوران نہ صرف پولنگ اسٹیشنز میں رہیں بلکہ بیلٹ پیپرز کی ترسیل کے دوران بھی ریٹرننگ افسروں کے دفاتر تک پہرا دیں اور جب تک تمام فارمز 45 اور حتمی نتیجہ نہیں مل جاتا اپنے ووٹ کی حفاظت کریں ‘۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *