میں ایک ثابت قدم، باوفا ساتھی سے محروم ہو گیا،نواز شریف کا سینیٹر مشاہد حسین سید کی وفات پر گہرے دکھ و افسوس کا اظہار

لندن (آن لائن) مسلم لیگ (ن) کے سربراہ نواز شریف کا سینیٹر مشاہد حسین سید کی وفات پر گہرے دکھ و افسوس کا اظہار۔ اپنے تعزیتی بیان میں سابق وزیراعظم نے کہا کہ سینیٹر مشاہد اللہ خان کے انتقال کی خبر سن کر مجھے بے حد رنج ہوا۔میں ایک ایسے ثابت قدم، بہادر، جرات مند اور باوفا ساتھی سے محروم ہو گیا ہوں جو آئین کی

سربلندی اور جمہوری قوتوں کی ایک بے باک آواز تھے۔اللہ تعالی انہیں جنت الفردوس میں جگہ عطا فرمائے اور لواحقین کو صبرِ جمیل دے۔آمین۔دریں اثناء پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے سینیٹر مشاہد اللہ خان کے انتقال پر پر دلی رنج و غم اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔ایک تعزیتی پیغام میں شہبازشریف نے کہا کہ آج ایک بہادر نظریاتی ساتھی، باوفا بھائی اور ایک بہترین دوست کو کھو دیا ہے۔ مشاہد اللہ خان مجسم وفا اور نظریاتی وابستگی کی روشن مثال تھے۔آمریت کی سیاہ رات میں وہ ایک بجلی کی طرح کڑکتے تھے۔مشاہد اللہ خان تمام عمر اپنے نظریات پر سختی سے کاربند رہے اور کبھی ان پر سمجھوتہ نہیں کیا۔سیاست اور ادب ان کے خمیر میں گندھے ہوئے تھے، ان کی یاد ہمیں ہر پل آتی رہے گی۔اللہ تعالی انہیں جنت الفردوس میں اعلی مقام عطا فرمائے اور اہل خانہ کو صبر جمیل دے۔ آمین۔ واضح رہے کہ نائب صدر مسلم لیگ ن مریم نواز نے مشاہد اللہ خان کے انتقال پر افسوس کا اظہار کرتے ہوے کہا ہے کہ مجھے لگ رہا ہے میرے والد جیسا میرا فیملی ممبر چلا گیا ہو۔ مشاہد اللہ خان مرحوم کے گھر کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوے انہوں نے کہا شائد مسلم لیگ ن کو نہیں جمہوریت کو نہیں پاکستان کو مشاہد اللہ جیسا فگر نہیں ملے گا۔ انہوں نے کہا کہ مشاہد اللہ جمہوریت کے لئے آمریت

کے خلاف سینیٹ میں توانا آواز تھی۔ انہوں نے کہا میری ان سے باپ بیٹی جیسا تعلق تھا۔ انھوں نے میری سیاسی تربیت کی ہر ریلی جلسہ میں معاونت کی۔ انہوں نے کہا میری ہر ریلی اور جلسہ کے بعد پہلا پیغام مشاہد اللہ خان کا آتا تھا۔ انہوں نے کہا انکا فن خطاب تھا علم کا دریا تھے، مجھے گائیڈ کرتے تھے۔میرے لئے تو بہت بڑا نقصان ہے۔ انہوں نے کہا کہ اللہ پاک مشاہد اللہ کے درجات بلند کریں اور مغفرت فرمائیں۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *