سعد رفیق بیگناہ نکلے ، تحقیقات میں نیب کے ہاتھ کچھ نہ لگا نیب نے سابق وزیر ریلوے کیخلاف بڑا کیس بند کرنیکا فیصلہ کرلیا

لاہور( این این آئی، آن لائن)قومی احتساب بیورو( نیب ) لاہور نے سابق وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کے خلاف حافظ آباد ٹرین حادثے کی تحقیقات مکمل کر لیں اور سابق وزیر کو کلین چٹ دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق پراسکیوشن ونگ نے تجویز دی ہے کہ سعد رفیق

کے خلاف انکوائری بند کردی جائے۔ نیب تحقیقات میں خواجہ سعد رفیق کے انکوائری پر اثر انداز ہونے کے شواہد نہیں ملے۔ سابق وزیر ریلوے پر الزام تھا کہ ٹرین حادثے کی انکوائری ٹھیک نہیں کرائی گئی تھی۔یاد رہے کہ سال 2015 میں چھناواں پل ٹوٹنے سے ٹرین کا انجن اور تین بوگیاں لوئر چناب نہر میں جا گریں تھیں، حادثے میں پاک آرمی کے 4افسران،1 افسر کی اہلیہ، 2 بچے، 1صوبیدار میجر، 5 سپاہی اور تین سویلین جاں بحق ہوئے تھے ۔ سابق وزیر ریلوے کے خلاف شکایات موصول ہوئی تھیں کہ اصل مجرم کو بچا لیا گیا۔دوسری جانب قومی احتساب بیورو نے مسلم لیگ ن کے رہنما سابق وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کے خلاف لوکو موٹیو انکوائری بھی بند کرنے کا فیصلہ کرلیا۔ اس حوالے سے تفصیلات میں نیب ذرائع کی طرف سے بتایا گیا ہے کہ ڈی جی نیب لاہور کی جانب سے تفتیشی ٹیم کی انکوائری بند کرنے کی سفارش کی گئی ہے ، جس کی رپورٹ چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کو بھجوا دی گئی ہے

،چیئرمین نیب انکوائری بند کرنے کی حتمی منظوری دیں گے۔واضح رہے کہ مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ سعد سمیت دیگر پر ان کے دور وزارت میں ریلوے کے لیے مہنگے داموں لوکو موٹیو خریدنے کے الزامات تھے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.