ملائیشیا میں روکا گیا پی آئی اےکا طیارہ وطن واپس پہنچ گیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک /آئن لائن)ملائیشیا میں روکےگئے پی آئی اے طیارے کی وطن واپسی، طیارہ اسلام آباد انٹرنیشنل ائیرپورٹ پہنچ گیا۔پی آئی اے کے طیارے کو لیزنگ کی رقم کے تنازع پر عدالتی حکم پر کوالمپور میں روکا گیا تھا۔نجی ٹی وی کے مطابق دونون فریقین کے درمیان معاملہ طے پانے کے بعد طیارے کی واپسی کی اجازت ملی۔واضح رہے کہ ملائیشیا کی ایک عدالت نے

طیارے کی لیز کے معاملے پر دو ہفتے قبل روکے گئے پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائن کا طیارہ فوری ریلیز کرنے کا حکم دیا ہے۔ غیر ملکی خبر رساں ادار ے کے مطابق ملائیشین حکام نے 15 جنوری کو بوئنگ 777 طیارے پرتحویل میں لے لیا تھا جب ایک عدالت نے طیارے کے کرایہ دار پیریگرین ایوی ایشن چارلی لمیٹڈ کی جانب سے درخواست منظور کر لی تھی۔عدالت نے برطانیہ کی ایک عدالت میں پی آئی اے کے ساتھ ایک کروڑ 40لاکھ ڈالر لیز کے تنازع کے زیر التوا مقدمے کے نتیجے تک طیارے کو گراؤنڈ کرنے کا حکم دیا تھا۔ایئر لائن کی نمائندگی کرنے والے ایک وکیل کے مطابق دونوں فریقوں کی جانب سے کہا گیا ہے کہ وہ تنازع کی دوستانہ طریقے سے تصفیے پر راضی ہو گئے جس کے بعد کوالالمپور ہائی کورٹ نے طیارے کو فوری طور پر رہا کرنے کا حکم دیا۔پی آئی اے کے وکیل کوان ول سین نے کہا کہ پیریگرین پی آئی اے سی کے خلاف اپنا مقدمہ واپس لینے اور حکم امتناعی احکامات کو مسترد کرنے پر رضامند ہوگئی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ اس کے ساتھ ہی پی آئی اے سی کے زیرانتظام دو بوئنگ طیارے فوری ریلیز کیے جائیں گے۔دونوں جیٹ طیاروں کو پی آئی اے کو 2015 میں دنیا میں طیارے لیز پر دینے والے والے سب سے بڑے ادارےایرکیپ نے لیز پر دیا تھا۔وہ اس پورٹ فولیو کا ایک حصہ ہیں جسے ائرکپ نے پی سی گرین ایوی ایشن کمپنی لمیٹڈ کو 2018 میں فروخت کیا تھا۔پیریگرن کی نمائندگی کرنے والے وکلاسے تبصرے کی درخواست کی گئی لیکن انہوں نے درخواست کا جواب نہیں دیا۔دریں اثنا ملائیشیا میںضبط کیا گیا قومی ایئر لائن (پی آئی اے) کا طیارہ پاکستان کے حوالے کردیا گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق پی آئی اے اور لیزنگ کمپنی کے درمیان معاملات طے پاگئے جس کے بعد باہمی رضامندی سے ملائیشین عدالت میں درج کیس خارج ہوگیا ہے اور ضبط کیا گیا طیارہ قومی ایئر لائن کےحوالے کردیا گیا ہے۔ترجمان پی آئی اے نے طیارے کی پاکستان کو حوالگی کی تصدیق کرتے ہوئے کہا جہاز کے عملے کو ملائیشیا روانہ کیا جائے گا اور اگلے دو روز میں طیارے کو پاکستان واپس لایا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ طیارے کو دوبارہ مسافر طیارے کے طور پر ہی آپریٹ کیا جائے گا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.