مولانا فضل الرحمن کی پی ڈی ایم سربراہی چھوڑنے کی خبریں سامنے آنے کے بعدسربراہ جے یو آئی نے بڑا اعلان کر دیا

اسلام آباد ( آن لائن/مانیٹرنگ ڈیسک )مولانا فضل الرحمان نے پی ڈی ایم سربراہی چھوڑنے کی خبروں کی تردید کرتے ہوئے اسے بے بنیاد قرار دیکر مسترد کردیا ،مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ مختلف چینلز پر سربراہی سے متعلق چلنے والہ خبریں بے بنیاد ہے، ایسی جھوٹی خبریں پھیلانے والے پی ڈی ایم کی مقبولیت سے خائف ہیں تاہم ایسے پراپیگنڈوں سے پی ڈی ایم میں د راڑیں نہیں ڈالی جا سکتیں،

نواز شریف اور آصف علی زرداری سے ایسی کوئی گفتگو نہیں ہوئی، پی ڈی ایم متحد اور متفق ہے، افواہیں پھیلانے والے غفلت کی نیند میں سورہے،پی ڈی ایم کی تحریک نے 70 فیصد مقاصد پورے کرلئے ہیں،4 فروری کو سربراہی اجلاس پے اس میں مزید اہم فیصلے ہوں گے۔واضح رہے کہ اس سے قبل یہ خبر سامنے آئی تھی کہ ولانا فضل الرحمان نے شکوہ کیا کہ ضمنی الیکشن میں حصہ لینے کا اعلان پی ڈی ایم کو اعتماد میں لیے بغیر کیا گیا۔ سینیٹ الیکشن میں حصہ لینے کا اعلان بھی میڈیا میں کیا گیا۔مولانا فضل الرحمان کا موقف ہے کہ مسلم لیگ ن اور پاکستان پیپلز پارٹی اپنے فیصلے پی ڈی ایم پر مسلط کر رہے ہیں۔ جب بلاول اور مریم نے خود ہی فیصلے کرنے ہیں تو پھر مجھے سربراہی کیوں دی گئی۔انہوں نے کہا کہ طے ہوا تھا کہ ہر فیصلہ پی ڈی ایم جماعتوں کی مشاورت سے ہو گا۔چھوٹی جماعتوں کو خدشات ہیں کہ پاکستان پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ (ن) انہیں استعمال کر رہی ہیں ،انہوں نے شکوہ کیا کہ دیگر جماعتوں کے رہنمائوں کو بھی خدشات ہیں۔ ذرائع نے بتایا کہ مولانا فضل الرحمان نے سابق صدر آصف علی زرداری اور سابق وزیراعظم نواز شریف کو اپنے خدشات سے آگاہ کر دیا ہے۔ جس پر آصف علی زرداری اور نواز شریف نے مولانا فضل الرحمان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اتحاد برقرار رہنا چاہئے۔ دونوں رہنمائوں نے مولانا فضل الرحمان سے کہا کہ آپ کی شخصیت ہی پی ڈی ایم کو آگے لے کر چل سکتی ہے۔آصف زرداری اور نواز شریف نے مولانا فضل الرحمان کو یقین دہانی کروائی کہ آئندہ شکایت نہیں ملے گی، ہر فیصلہ مشاورت سے ہو گا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.