امریکی کرکٹ ایسوسی ایشن کا رابطہ ایک اور پاکستانی کرکٹر کا وطن چھوڑ کر امریکہ منتقل ہونے پر غور

لاہور(آن لائن)قومی ٹیم کے اوپنر سمیع اسلم کے بعد ایک اور دلبرداشتہ کھلاڑی نے بھی پاکستانی ٹیم کے لیے کھیلنے کے مواقع نہ ملنے کے بعد امریکہ منتقل ہونے پر غور شروع کردیا ہے۔ 27 سالہ فاسٹ باؤلر احسان عادل کا امریکی کرکٹ ایسوسی ایشن سے رابطہ ہوا ہے اور انہوں نے امریکہ منتقلی کا فیصلہ کرنے کے لیے وقت مانگ

لیا ہے، احسان عادل کا کہنا تھا کہ انہوں نے نیشنل ٹی ٹونٹی کپ میں بھی عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کیا تھا لیکن پھر بھی انہیں قومی ٹیم میں مواقع نہیں مل رہے اور اگر صورتحال ایسی ہی رہی تو وہ لیگ کرکٹ کھیلنے کے لیے امریکہ منتقل ہوجائیں گے۔واضح رہے کہ احسان عادل نے 2013 سے 2015 کے دوران 3 ٹیسٹ اور 5 ون ڈے مقابلوں میں پاکستان کی نمائندگی کررکھی ہے۔اس سے قبل قومی ٹیم کے اوپنر سمیع اسلم پاکستان چھوڑ کر امریکہ منتقل ہوگئے ہیں۔ سمیع اسلم کا کہنا تھا کہ انہوں نے قومی ٹیم میں واپسی کی امیدیں ختم ہوتی دیکھ کر امریکہ میں بسنے کا فیصلہ کیا، انہیں افسوس ہے کہ قومی ٹیم میں انہیں موقع نہیں مل رہا اور ڈومیسٹک کرکٹ میں رنز کے انبار لگانے کے باوجود ان پر دوسرے کھلاڑیوں کو ترجیح دی جارہی ہے۔دوسری جانب فاسٹ بالر محمد عامر نے ایک مرتبہ پھر سابقہ موقف کو دہراتے ہوئے کہا ہے کہ اس ٹیم مینجمنٹ کے جانے کے بعد ہی پاکستان ٹیم کے لیے دستیاب ہوں گے۔محمد عامر نے قومی ٹیم کی موجودہ مینجمنٹ سے اختلافات کے سبب ریٹائرمنٹ کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ جب تک یہ مینجمنٹ موجود ہے، اس وقت تک وہ پاکستان کی نمائندگی نہیں کریں گے۔ سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں عامر نے اپنے سابقہ موقف کو پھر دہراتے ہوئے کہا کہ میں اس بات کی وضاحت کرنا چاہتا ہوں کہ اس مینجمنٹ کے چھوڑنے کے بعد ہی میں پاکستان ٹیم کے لیے دوبارہ دستیاب ہوں گا لہذا اپنی خبریں بیچنے کے لیے غلط خبریں پھیلانا بند کریں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.