خواجہ سعد رفیق نے حکومت کو بڑی خوشخبری سنادی‎‎

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )پاکستان ن لیگ کے مرکزی سینئر رہنما خواجہ سعد رفیق نے کہاہے کہ پاکستان ڈیمو کریٹ موومنٹ کا حکومت گرانا مقصد نہیں ہے ، ہماری کوشش یہ ہے کہ ملک میں جمہوریت کی بحالی عمل میں لائی جائے۔اس کیلئے پی ڈی ایم میں شامل تمام پارٹیز کی یہی کوشش ہے اور یہ جمہوریت کی بحالی تک جارہی رہے گی ۔ نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سیالکوٹ پریس کانفرنس کے

دوران خواجہ سعد رفیق کا کہنا تھا کہ گرفتاریوں کا احتساب سے کوئی دور دور تک تعلق نہیں ہے بلکہ خواجہ آصف کی گرفتار لاڈلے کے کہنے پر کی گئی ہے ۔ انہوںنے خواجہ آصف کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لئے آئے ہیں ، آمریت کے نام پر جمہوریت کو داغ دار کیا گیا۔ ہم پر جھوٹ کیسز بنائے جارہے ہیں جن کا ہم سے دور دور تک کوئی تعلق واسطہ نہیں ہے ۔ خواجہ آصف کی گرفتار لاڈلے کی فرمائش تھی جس رد نہیں کیا جا سکتا ہے تھا ۔خواجہ سعد رفیق کا کہنا تھا کہ خواجہ آصف بہت جلد بے بنیاد الزامات سے چھٹکارا حاصل کر کے آزاد ہو جائیں گے ۔ لیگی رہنما کا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم کا مقصد حکومت گرانا نہیں بلکہ جمہوریت بحال کرنا ہے، ملک کو73 کے آئین کے مطابق چلانا ہے۔ انہوں نے وزیراعظم عمران خان کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ پہلا حکمران اور اس کے پیروکار ہیں جو ٹی وی پر گالیاں بکتے ہیں۔لیگی رہنما عطا تارڑ نے کہا کہ 19 جنوری کو الیکشن کمیشن کے سامنے بھر پور احتجاج ہو گا۔ این آر او کے طعنے ہمیں دیئے جا رہے ہیں، خود مافیا کے ذریعے اقتدار میں آئے ہیں۔ خواجہ آصف کے پاس تمام رسیدیں موجود ہیں۔ چھ سال بعد ان کو یاد آیا ہے کہ ان کا ایجنٹ ہے۔ فیصل واوڈا کے کیس میں چھ ماہ گزر گئے ہیں، ابھی تک فیصلہ نہیں آیا۔ ایل این جی، چینی سکینڈل سمیت تمام معاملات کا جواب دینا پڑے گا۔ کیا وجوہات تھیں کہ خواجہ آصف کا کیس راولپنڈی منتقل کرنا پڑا۔ اپوزیشن کی تقریریں عمران خان کے اعصاب پر سوار رہتی ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.