چینی کی قیمت کہاں تک جا سکتی ہے؟ شوگر ملز ایسوسی ایشن نے وزیراعظم کو خط لکھ کر وارننگ دے دی

اسلام آباد (آن لائن)پاکستان شوگر ملز ایسوسی ایشن نے عوام کو75 روپے فی کلو چینی کی فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے وزیر اعظم کو خط لکھ دیا ہے،ملک تقریبا3لاکھ ٹن چینی سے محروم ہوگیا ہے،چینی کی قیمت ایک بار پھر100 سے زائد ہونے کا خدشہ ہے۔ہفتہ کے روز پاکستان شوگر ملز ایسوسی کی جانب سے وزیر اعظم کو لکھے گئے خط میں کہاگیا ہے کہ حکومتی احکامات کی روشنی میں کرشنگ 30نومبرسے15-20 روز قبل شروع کی گئی جس کے نتیجے میں گنے سے ریکوری انتہائی کم رہی،ملک تقریبا3لاکھ ٹن چینی سے محروم ہوا ہے،خط میں مزید کہا گیا ہے کہ حکومتنے یقین دہانی کرائی تھی مڈل مین کو دخل اندازی کی اجازت نہیں ہو گی،کہا گیا تھا 200 روپے فی من گنے کی قیمت یقینی بنائی جائے گی،

تمام صوبوں کے کمشنر مڈل مین کا کردار ختم کرانے میں مکمل ناکام رہے،گنے کی فی من قیمت 270 سے 300 روپے تک پہنچ چکی ہے، چینی کی قیمت ایک بار پھر 100 روپے کلو سے اوپر جانے کا خدشہ ہے، وزیراعظم شوگرملزکوگنے کی حکومتی مقررکرکے قیمت پرفراہمی یقینی بنائیں تا کہ عوام کو چینی 75 روپے فی کلو کے مناسب ریٹ پر دستیاب ہو۔دوسری جانب فیصل آباد میں منافع خور اور ذخیرہ اندوز مافیا پھر سرگرام ہوگیا، ضلعی انتظامیہ نے عام مارکیٹ میں چینی کی فی کلو گرام قیمت 88 روپے مقرر کردی،جبکہ آٹا،چینی اور کھانے والے آئل اور گھی کی قمیتوں آضافہ،گندم کی قیمت میں فی من200روپے اضافہ،چینی 100سے 105تک فروخت ہونے لگی جبکہ آئل اور گھی کی قیمتوں مختلف کمپنیوں نے 20سے 60روپے فی کلو اضافہ کردیا آن لائن کے مطابق گذشتہ ہفتہ کے دوران ایک بار پھر مہنگائی کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے ضلعی انتظامیہ منافع خور اور ذخیرہ اندوز مافیا کے سامنے بے بس نظر آرہی ہے ضلع فیصل آباد میں میں ایک بار پھر سے گندم کا بحران شروع ہوگیا ہے جسکی وجہ 2200روپے فی من فروخت ہونے والی گندم 2400روپے فی من فروخت ہورہی ہے اور گندم کی قیمت میں اضافہ کے ساتھ فی چکی مالکان نے آٹے کی قیمت میں بھی اضافہ کردیا ہے اس طر ح چینی بھی 100سے 105تک فروخت ہورہی جبکہ آئل اور گھی کی قیمتوں مختلف کمپنیوں نے 20سے 60روپے فی کلو اضافہ کردیا علاوہ ازیں ضلعی انتظامیہ نے عام مارکیٹ میں چینی کی فی کلو گرام قیمت 88 روپے مقرر کردی ہے۔اس سلسلے میں ڈپٹی کمشنر فیصل آباد کی طرف سے نوٹیفیکیشن جاری کردیا گیا ہے۔ مگر مارکیٹوں اور بازار وں میں منافع اپنے ہی ریٹ پر چینی فروخت کر رہے ہیں اورمنافع خور اور ذخیرہ اندوز مافیا کے سامنے ضلعی انتظامیہ مکمل طور بے بس ہوگئی ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *