حکومت کے ساتھ معاملات طے نہیں ہوئے، سانحہ مچھ کے لواحقین کی مذاکرات کامیابی کی تردید

اسلام آباد(مانیٹرنگ +آن لائن)وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات سینیٹر شبلی فراز نے کہا ہے کہ وزیراعظم نے اپنی ہر پالیسی میں غریب طبقات کا خیال رکھا ہے،ماضی میں ملک کی غیر منصفانہ تقسیم کی گئی،ماضی میں فرقہ واریت تعصب اور لسانیت کو ہوا دی گئی،جس کا خمیازہ ہم بھگت رہے ہیں، سانحہ مچھ کے لواحقین سے مذاکرات

جاری ہیں، وزیراعظم عمران خان بالکل کوئٹہ جائیں گے، متاثرین اپنے غم میں ڈوبے ہوئے ہوتے ہیں ان کی کوئی ڈیمانڈ نہیں آئی، بعض لوگ سیاست کرتے ہیں اور پیچیدگی پیدا کردیتے ہیں۔ ان خیالا ت کااظہار انہوں نے  پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے صحت اور تعلیم پر خصوصی توجہ دی ہے،ہمیشہ غریب طبقہ کو انہوں نے پہلی ترجیح دی ہے،احساس پروگرام لنگرخانے اور نوجوان پروگرام وزیراعظم کی مرہون منت ہیں،وزیراعظم کے ویژن کے تحت اخبار فروشوں کے لئے پروگرام ترتیب دیا گیا ہے،پورے ملک میں ہمارے خصوصی پروگرام کام کر رہے ہیں،پسماندہ علاقوں میں بھی حکومت مسلسل کام کر رہی ہے،سب کو مساویانہ حقوق دینا وزیراعظم کا ویژن ہے۔ٹکا خان مؤثر وکیل ہیں،فلاح وبہبود اور نگہداشت کا سلسلہ جاری رکھیں گے،ہم نہیں کہہ سکتے کہ ہمارا ملک دہشتگردی سے پاک ہوگیا ہے،ہم نے جنگیں لڑی تھیں،وہ فصل ہے جس کو ہم کاٹ رہے ہیں،لسانیت فرقہ واریت کی بنیاد پر ایسے واقعات نہیں ہونے چاہئے کہ لوگوں کے گلے کاٹ لئے جائیں،قتل عام ہو۔دوسری جانب بعض میڈیا ذرائع نے سانحہ مچھ کے لواحقین اور حکومت کے درمیان معاہدے طے پانے کے بارے میں خبریں بھی دیں، جس میں کہا گیا کہ دھرنا مظاہرین جلد ہی دھرنا ختم کر دیں گے،

میڈیا ذرائع کے مطابق لواحقین نے تین رہنماؤں سے کہا تھا کہ انہیں اپنے پیاروں کی تدفین کی اجازت دی جائے لیکن وہ نہیں مانے، شہداء کے لواحقین کے ساتھ ساتھ ممتاز عالم دین علامہ شہنشاہ نقوی بھی رات بھر ہزارہ کمیونٹی کے ان رہنماؤں کو سمجھانے میں لگے رہے ہیں شہداء کی تدفین کر دی جائے، دوسری جانب شہدا کمیٹی نے حکومت کے ساتھ مذاکرات کی تردید کی ہے، علامہ ہاشمی موسوی نے کہا ہے کہ شہداء کمیٹی کے اجلاس میں فیصلہ کیاگیا ہے کہ وزیراعظم کے کوئٹہ آنے تک دھرنا رہے گا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *