معاوضہ چیک کی بجائے نقدا دا کیا جائے سانحہ مچھ کے لواحقین کا حکومت سے مطالبہ

اسلام آباد،کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک ،این این آئی) مظاہرین کاسانحہ مچھ کے خلاف کوئٹہ مغربی بائی پاس پردھرنا پانچویں روز بھی جاری ہے۔نجی ٹی وی کے مطابق شہدا کے لواحقین نے حکومت سے معاوضہ چیک کی بجائے نقد دینے کا مطالبہ کر دیا ہے لیکن مظاہرین کے اس

مطالبے پر حکومت کشمکش کا شکار ہے کیونکہ رولزکے مطابق وفاقی حکومت معاوضہ نقد ادا نہیں کرسکتی ۔ ذرائع کے مطابق وفاقی وزیرداخلہ شیخ رشید نے معاوضہ چیک میں دینے کی پیشکش کی لیکن لواحقین نے نقد ادائیگی کا مطالبہ کردیا۔ذرائع کے مطابق لواحقین نے کہا کہ جاں بحق ہونے والے 70 فیصد افغانی ہیں جن کے بینک اکائونٹس نہیں ہیں لہذا معاوضہ نقد دیا جائے۔ تاہم رولز کے مطابق وفاقی حکومت معاوضہ نقد ادا نہیں کرسکتی ، کیش دینے کے لیے رولزمیں تبدیلی صوبائی حکومت کو کرنا ہوگی۔دوسری جانب مچھ واقعے کے خلاف کراچی کے مختلف علاقوں میں جاری احتجاج اور روڈ کی بندش کے باعث پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائن کا شیڈول بری طرح متاثر ہوگیا ہے، متعدد پروازیں منسوخ یا تاخیر کا شکار ہیں۔کراچی ایئرپورٹ کے راستوں پر شدید ٹریفک کے باعث مسافروں اور عملے کو پہنچنے میں دشواری کا سامناکرناپڑا۔ کراچی سے روانگی والی متعدد پروازیں منسوخ یا تاخیر کا شکار رہیں، جس کے باعث اندرون

ملک دوسری پروازیں بھی متاثر ہوئیں۔کراچی اور اسلام آباد کی پروازیں پی کے 368 اور 369، کراچی اور لاہور کی پروازیں پی کے 304 اور 305 منسوخ کردی گئیں۔کراچی اور اسلام آباد کی پروازیں پی کے 308 اور 309 دو گھنٹے تاخیر کا شکار ہوں گئیں۔کراچی تا پشاور پی کے 350 اور

کراچی تا فیصل آباد پی کے 340 تاخیر کے ساتھ شام 6 بجے روانہ ہوں گی۔ کراچی تا دبئی پرواز پی کے 213 بھی ڈیڑھ گھنٹا تاخیر سے روانہ ہوگی۔ترجمان عبداللہ خان کے مطابق تمام مسافروں سے التماس ہے کہ وہ بروقت معلومات کے لئے فلائٹ انکوائری یا پی آئی اے کال سینٹر سے رابطے میں رہیں۔ گھروں سے فلائٹس کے لئے نکلتے ہوئے وقت رکھ کر نکلیں۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *