ارب پتی عرب خاتون سے شادی کرنے والا ڈرائیور پاکستانی نہیں، افغانی نکلا

ریاض(نیوز ڈیسک) گزشتہ کئی روز سے دنیا بھر میں انتہائی امیر ترین سعودی خاتون کی پاکستانی ڈرائیور سے شادی کے حوالے سے خبریں سوشل میڈیا پر چل رہی ہیں، ان خبروں میں خاتون کو سعودی عرب کی امیرترین خاتون بتایا جا رہا ہے لیکن اس خاتون اور نوجوان کے

بارے میں نیا انکشاف سامنے آیا ہے، اصل میں وائرل ہونے والی ویڈیو میں موجود خاتون سعودی ارب پتی خاتون نہیں ہے بلکہ وہ اماراتی مصنفہ یاسمین بنت مشال السدری ہیں، انہوں نے افغانستان پر ایک کتاب بھی لکھ رکھی ہے اور انہوں نے جس ڈرائیور سے شادی کی ہے وہ پاکستانی نہیں ہے اس کا تعلق افغانستان سے ہے۔ بی بی سی کے مطابق 23 دسمبر 2020ء کو دونوں نے سادگی سے شادی کی، اس تقریب کی ویڈیو احمد العلیان نامی صارف نے چوبیس دسمبر کو شیئر کی، جس کے ساتھ انہوں نے لکھا کہ افغانستان پر کتاب لکھنے والی یاسمین بنت مشال السدری نے اپنے افغان ڈرائیور سے ہی شادی کر لی ہے اور مذکورہ ویڈیو اسی تقریب کی ہے۔ یاد رہے کہ گلف کے مشہور میگزین خلیج ٹائمز نے دعویٰ کیا تھا کہ سعودی عرب کی امیر ترین خواتین میں سے ایک جس کے اثاثوں کی مالیت 8ارب ڈالر ہے اس نے اپنے پاکستانی ڈرائیور سے شادی کرلی ہے، ساہو بنت عبداللہ المحبوب نامی اس خاتون کے بارے میں کہا گیا تھا کہ مکہ اور مدینہ میں کئی ہوٹلز اور رہائشی بلڈنگز بھی اس کی ملکیت ہیں جبکہ فرانس میں بزنس ٹاور سمیت دیگر ممالک میں بھی جائیدادیں موجود ہیں لیکن بی بی سی کی رپورٹ کچھ اور ہی حقیقت بیان کر رہی ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *