پنجاب حکومت کر کیا رہی ہے ، اگر فیصلوں کو نہیں ماننا تو اسمبلی کا کیا فائد ،اس بند کر دیا جائے ،اسپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الہٰی شدید برہم ہو گئے

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)اسپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الہٰی نے مفاد عامہ کے منصوبوں کے لیے فنڈز جاری بہ ہونے پر صوبائی حکومت پر سخت برہمی کا اظہار کیا ہے۔پنجاب اسمبلی اجلاس میں مفاد عاملہ کے منصوبوں کے معاملہ پر بحث کے دوران چودھری پرویز الہٰی نے کہا کہ صوبائی حکومت کیا کررہی ہے اسمبلی سے پاس کردہ بجٹ کیوں جاری نہیں کیا جا رہا؟انہوں نے کہا کہ

اگر اسمبلی کے فیصلوں کو نہیں ماننا ہے تو اس اسمبلی کا کیا فائدہ، اسے بند کر دیاجائے۔نجی ٹی وی ہم نیوز کی رپورٹ کے مطابق فنانس کمیٹی آف ڈویلپمنٹ منصوبوں کے راستے میں بڑی رکاوٹ ہے۔چودھری پرویز الہٰی نے کہا کہ صوبائی حکومت کیا کررہی ہے؟ پاکستان تحریک انصاف حکومت کا اس وجہ سے کوئی بھی منصوبہ سامنے نہیں آرہا ہے۔اسپیکر پنجاب اسمبلی نے کہا کہ وزیر آباد کارڈیالوجی کو منظور شدہ بجٹ چھ ماہ سے نہیں دیاجارہا ہے۔ کیا فائدہ ایسے بجٹ کا جو کمیٹیوں میں گھومتا رہے۔ میں نے وزیر اعلیٰ پنجاب کو بھی کہا لیکن وزیر آباد کارڈیالوجی کا کچھ نہیں بنا۔اسپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الہٰی نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے بھی اس منصوبے کا افتتاح کیا تھا۔خیال رہے کہ اکتوبر میں وزیراعظم عمران خان نے پنجاب حکومت کو عوامی فلاحی منصوبوں کو جلد مکمل کرنے اور سرمایہ کاروں کو سہولیات فراہم کرنے کی ہدایات کر دی تھی۔ایوان وزیراعلیٰ میں بلدیات کی سطح پر ترقیاتی منصوبوں کے بارے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے عمران خان نے کہا تھا کہ پائیدار ترقی کیلئے پسماندہ علاقوں پر توجہ دی جائے۔وزیراعظم نے حکام کو ہدایت کی تھی کہ غیر ترقی یافتہ علاقوں پر بھرپور توجہ دی جائے اور ترقیاتی منصوبوں پر کام تیز کیا جائے۔وزیراعظم کی زیر صدارت اجلاس میں محکمہ لوکل گورنمنٹ اور کمیونٹی ڈویلپمنٹ کی طرف سے تحصیل، ضلع اور دیہات میں مسائل کے حل کیلئے تجویز کردہ منصوبوں سے متعلق بریفنگ دی گئی تھی۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.