استعفے دینے سے قبل آصف زرداری نے نوازشریف سے متعلق مولانا فضل الرحمان سے بڑی گارنٹی لے لی

سلام آباد (این این آئی /مانیٹرنگ ڈیسک )پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز سے ملاقات کیلئے جاتی امراء پہنچ گئے ہیں ۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ 13دسمبر کوہونے والے جلسے اور دیگر امور پر تبادلہ خیال بھی کیا گیا ۔جلسے میں پی ڈی ایم کے اتحاد میں شامل جماعتوں کی قیادت اور مرکزی رہنما شریک ہوں گے ، جلسے سے مسلم لیگ (ن) کے

قائد محمد نواز شریف بذریعہ ویڈیو لنک خطاب کریں گے ۔ دوسری جانب نجی ٹی وی رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ پی پی پی کی قیادت نے اراکین اسمبلی سے استعفے مانگے جس کیلئےپیغام تمام اراکین اسمبلی کو رات گئے پہنچایا گیاہے ۔نجی ٹی وی نے ذرائع کے حوالے سے دعوی میں کہا ہے کہ وزیراعلیٰ سندھ سمیت کابینہ اراکین کو بھی استعفے جمع کروانے کی ہدایت کر دی گئی اور اسمبلی سیکریٹریٹ میں استعفے جمع کروانے کا فیصلہ پارٹی کرے گی ،فیصلے سے قبل آصف زرداری نے مولانا فضل الرحمان سے گارنٹی لی کہ نوازشریف دھوکہ نہیں دیں گے ۔قبل ازیں پیپلزپارٹی نے سندھ اسمبلی کے تمام ارکان کے استعفے بلاول ہائو س میں جمع کرانے کے احکامات دے دیئے ہیں۔ذرائع کے مطابق سندھ اسمبلی میں پیپلزپارٹی کے ارکان بھی استعفے جمع کرائیں گے، پی پی اعلی قیادت نے سندھ اسمبلی کے تمام ارکان کو استعفے بلاول ہاس میں جمع کرانے کا حکم دیا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے وزیرِ اعلی سندھ مراد علی شاہ کو بھی ہدایت کی گئی ہے کہ وہ اپنا استعفیٰ جمع کرائیں، ارکان سندھ اسمبلی کو اسپیکر کے نام ہاتھ سے تحریر کردہ استعفے لکھنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ذرائع نے بتایا کہ تمام ارکانسندھ اسمبلی 14 دسمبر تک اپنے استعفے چیئرمین سیکریٹریٹ میں جمع کرائیںگے، پی ڈی ایم جماعتوں میں استعفے پارٹی قیادت کے پاس جمع کرانے کا فیصلہ ہوا تھا۔دوسری جانب پاکستان پیپلز پارٹی سندھ کے صدر نثار کھوڑو نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی پارلیمنٹ اور اسمبلیوں سے استعفے دینے کے معاملے پر کلیئر ہے

اور پارٹی کا ہر ایک ممبر قیادت کے حکم اور فیصلے پر عمل کرنے کا پابند ہے، ملک اور عوام پر سول ڈکٹیٹرشپ کی صورت میں مسلط اس حکومت کو گھر بھیجنے کے لیے تمام آپشن استعمال کرینگے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعے کو اپنے ایک جاری بیان میں کیا ہے۔ نثار کھوڑو نے کہا ہے کے اپوزیشن کوئی اور این آر او نہیں مگر نیازی ریموول آرڈیننس کی صورت میں این آر او چاہتی ہے۔

عوام نیازی رموول آرڈیننس والا این آر او لے کر رہے گی اور وزیراعظم کو ہر صورت گھر جانا پڑے گا۔انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت اس خوش فہمی میں نہ رہے اور استعفوں کے بعد ضمنی انتخابات نہیں ملک میں قبل از وقت انتخابات ہی ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان ماضی میں شیخ رشید کو چپڑاسی رکھنے کے قابل نہیں سمجھتے تھے اب انہیں وزارت داخلہ دینے پر مجبور ہوگئے۔ انہوں نے کہا کے چپڑاسی کے لئے قابل نہ سمجھنے والے شخص کو وزارت داخلہ سونپنا وزیراعظم عمران خان کا ایک اور یوٹرن ہے۔

نثار کھوڑو نے کہا کے وزیراعظم عمران خان ملک اور عوام کے لئے کچھ اور تو نہیں کر سکے ہیں مگر یوٹرن لینے کا ریکارڈ قائم کردیا ہے۔یہ وزیراعظم کا 250 واں یوٹرن ہے۔ انہوں نے کہا کے وزیراعظم پی ڈی ایم کے جلسوں نے آپ کی نیندیں اڑا دی ہیں اب تو اور جلسے جلوس ہونگے پہر سوچیں آپ کا کیا حال ہوگا۔ نثار کھوڑو نے مزید کہا کہ وزیراعظم عمران خان اپوزیشن سے مذاکرات کے لئے تیار ہونے کے

بیانات دے کر اب اپنے اقتدار کو طول نہیں دے سکتے۔ پی پی پی سندھ کے صدر نے کہا کے عوام پی ٹی آئی سرکار سے تنگ آ چکی ہے اس لئے عمران خان کا اقتدار پر مزید مسلط رہنا ملک کے لئے تباہی ثابت ہوگیا۔ نثار کھوڑو نے کہا کے 27 دسمبر کو شھید بینظیر بھٹو کی 13 ویں برسی کے سلسلے میں گڑھی خدا بخش بھٹو میں بڑا جلسہ عام ہوگا اور گڑھی خدا بخش بھٹو میں ملک بھر سے عوام شرکت کرے گی۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.