میں آج بھی عمران خان کا ٹائیگر ہوںمجھ پر بہت زیادہ تشددکیا گیا، ہتھکڑیاں لگا کر۔۔۔۔ عدالت نے ڈی جے بٹ کو رہا کرنے کا حکم دیدیا

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)مقامی عدالت نے کارسرکارمیں مداخلت،اسلحہ رکھنے،سائونڈایکٹ کی خلاف ورزی کے الزام میں گرفتار ہونیوالے ڈی جے بٹ کی ضمانت منظور کرلی ۔نجی ٹی وی کے مطابق ماڈل ٹائون پولیس نے ملزم ڈی جے بٹ کو جوڈیشل مجسٹریٹ کی عدالت میں

پیش کیا جہاں ملزم کی طرف سے پولیس پر تشدد کاالزام لگایا گیا، ڈی جے بٹ نے عدالت میں موقف اپنایا کہ  میں آج بھی عمران خان کا ٹائیگر ہوں، پولیس نے بہت زیادہ تشدد کیا ہے۔ جس اسلحہ کی بات کی جارہی ہے وہ لائسنس یافتہ ہے ،ان کے وکیل کا کہناتھاکہ اس مقدمے میں پولیس نے اپنے اختیارات کا غلط استعمال کیا۔عدالت نے ڈی جے بٹ کی ضمانت منظور کرتے ہوئے 50 ہزار روپے کے مچلکے جمع کرانے کا حکم دیدیا۔یادرہے کہ تحریک انصاف کے جلسوں اور دھرنے میں جوش و خروش بڑھانے والے ڈی جے بٹ کو گزشتہ روز گرفتار کیا گیاتھا، نیا پاکستان بنانے میں اہم کردار ادا کرنے والے ڈی جے بٹ پر ابتدائی الزام لگایا گیا کہ وہ اونچی آواز میں موسیقی سن رہے تھے جس سے عوام کے سکون میں خلل پیدا ہوا۔ ایف آئی آر میں یہ بھی الزام لگایا گیا کہ ڈی جے بٹ نے پولیس کے ساتھ مزاحمت کی اور ان کے دفتر سے ایک بندوق اور گولیاں بھی برآمد ہوئی ہیں۔ڈی جے بٹ کی گرفتاری کے وقت کی ویڈیو سوشل میڈیا پر تیزی سے وائرل ہو رہی ہے۔ اس ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ڈی جے بٹ پولیس والوں سے پوچھ رہے ہیں کہ انہیں کیوں گرفتار کیا جا رہا ہے۔ اس پر ایک اہلکار نے ڈی جے بٹ کو بتایا کہ انہیں اوپر سے آرڈرز آئے ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.