’’پی ڈی ایم کے سوشل میڈیا پر شیئر کیے گئے استعفے‘‘ اعتزازاحسن نے استعفوں کو “ناقابل قبول “قرار دیدیا‎

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک/ آئن لائن )نجی ٹی وی پروگرام میں اعتراز احسن نے اراکین اسمبلی کے استعفوں پر اعتراض اٹھا دیا ۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر مرکزی رہنما اعتراز احسن نے کہا ہے کہ جب تک تمام استعفے اسپیکر اسمبلی کو نہیں ملتے تو ان استعفوں کی کوئی حیثیت نہیں ہے ، میں دیکھ رہاہوں کہ سوشل میڈیا پر ٹائپ استعفے بھی شیئر کیے جارہے ہیں تو میں

یہ کہنا چاہوں گا کہ ٹائپ استعفے کی کوئی حیثیت نہیں ، استعفیٰ اپنے ہاتھوں جناب عالی سے اپنے سائن خود ہاتھوں سےلکھیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر پی ڈی ایم استعفے جمع کر کے اگراسپیکر اسمبلی کو ارسال کر دے تو اسپیکراسمبلی انہیں قبول کر کے الیکشن بھی کروا سکتا ہے،قسط وار منظور کر کے قسط وار بھی الیکشن کرواسکتا ہے ۔ قبل ازیں پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما چوہدری اعتزاز احسن نے پی ڈی ایم کو لاہور کا جلسہ ملتوی کرنے کا مشورہ دے دیا۔ نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکومتیں جلسے جلوس سے نہیں جاتیں صرف تیسری طاقت ہی اْنہیں گراتی ہے لیکن ن لیگ نے تو تیسری طاقت کے ساتھ بھی ٹکر لی ہے کیوں کہ مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز ملکی سیاست کو تصادم کی طرف لے کر جارہی ہیں لیکن ان کا منصوبہ کامیاب ہوتا نظر نہیں آرہا ، اپوزیشن جماعتوں کو بھی سوچنا چاہیئے کہ نوازشریف کے بیانیے میں پی ڈی ایم کامفاد نہیں ہے۔اعتزاز احسن نے کہا کہ استعفے دینے کا ایٹم بم چلانے کا فیصلہ مسلم لیگ ن اکیلے اپنے طور پر کیسے کر سکتی ہے؟ جس بھی سیاسی جماعت کو زیادہ شوق ہے تو وہ اپنے استعفے جمع کروائے لیکن میری ذاتی رائے میں پیپلزپارٹی کو استعفوں کی حد تک نہیں جانا چاہیئے۔پیپلزپارٹی کے رہنما نے کہا کہ مریم نواز تو نوازشریف سے بھی دو قدم آگے نکل گئی ہیں مگرانہیں موقع ملا تو وہ باہر چلی جائیں گی اگرایساہوا تو یہ ان کے لیے بڑا ریلیف ہوگا اوروالد کیساتھ رہیں گی۔‎

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.