پی ڈی ایم جلسے کے منتظم ڈی جے بٹ گرفتار

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک،این این آئی )پنجاب پولیس نے پی ڈی ایم کے لاہور مینار پاکستان جلسے سے قبل ڈی جے بٹ کو حراست میں لے لیا۔نجی ٹی وی کے مطابق ڈی جے بٹ کو لاہور کے ماڈل ٹائون تھانے منتقل کر دیا گیا، یاد رہے ن لیگ نے ڈی جے بٹ کو کارکنان کا لہو گرمانے

کی ذمہ داری سونپی تھی۔دریں اثنا پاکستان ڈیموکریٹک مومنٹ کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی رہائش گاہ پر اہم اجلاس ہوا جس میں پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو زر داری اور مریم نواز شریف کے علاوہ یوسف رضا گیلانی ، راجہ پرویز اشرف ، شاہد خاقا عباسی ،شیری رحمن ، پرویز رشید ، احسن اقبال ، مریم اور نگزیب اور مولانا اسعد محمود بھی موجود تھے ۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے مستقبل کے لائحہ عمل پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔علاوہ ازیں وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمان اور مریم نواز جو چاہتے ہیں وہ نہیں ہوگا۔اپنی ٹوئٹ میں فواد چوہدری نے کہا کہ ان کی اسپیکر قومی اسمبلی سے بات ہوئی، ان کے مطابق استعفے صرف میڈیا پر ہی چل رہے ہیں ایک بھی رکن اسمبلی نے اسمبلی سیکرٹریٹ کو استعفیٰ نہیں بھیجا۔وفاقی وزیر نے کہاکہ مولانا فضل الرحمن اور مریم بی بی جو چاہتے ہیں وہ نہیں ہونا، تلخیاں کم کرنے کی ضرورت ہے مسئلہ

جلسوں سے نہیں سمجھ سے حل ہونا ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ روز اسلام آباد میں پی ڈی ایم کا سربراہی اجلاس ہوا تھا جس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے اجلاس میں کیے گئے فیصلوں سے آگاہ کیا تھا۔ انہوں ںے کہا کہ تمام پارلیمانی جماعتوں کے اراکین کو ہدایت کردی ہے کہ وہ 31 دسمبر تک اپنے استعفی جمع کرادیں، سندھ سمیت تمام اسمبلیوں کے استعفے جمع کروائے جائیں گے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.