پیپلز پارٹی میں استعفوں کا سلسلہ شروع پارلیمانی لیڈر حسن مرتضیٰ کا انوکھا استعفیٰ

لاہور( این این آئی/آئن لائن ) پیپلز پارٹی کے پنجاب اسمبلی میں پارلیمانی لیڈر سید حسن مرتضی نے اسمبلی رکنیت سے مستعفی ہونے کے لئے پنجابی زبان میں متن تحریر کیا ۔حسن مرتضیٰ جو ایوان میں بھی پنجابی زبان میں تقریر کرنے میں شہرت رکھتے ہیں انہوں نے پنجاب اسمبلی کی رکنیت سے مستعفی ہونے کا متن بھی پنجابی زبان میں تحریر کر کے پارٹی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کو

ارسال کیا ہے۔دوسری جانب پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے حالیہ اجلاس کے فیصلے کی روشنی میں پنجاب اسمبلی سے پاکستان مسلم لیگ ن کے 8 اراکین اسمبلی نے اپنے استعفے پارٹی کی اعلیٰ قیادت کے پاس جمع کروا دئیے ہیں۔ استعفیٰ جمع کروانے والے اراکین پنجاب اسمبلی نے عنیزہ فاطمہ، اختر حسین میو، بلال فاروق تارڑ، بیگم خادم حسین، عظمیٰ بخاری، سمیع اللہ اور غزالی سلیم بٹ شامل ہیں۔ پی ڈی ایم کے سربراہ اجلاس میں کئے گئے فیصلے کے بعد مسلم لیگ (ن) کے اراکین اسمبلی کی جانب سے اپنے استعفے قیادت کو جمع کرانے میں تیزی آگئی ہے۔ اراکین قومی سمبلی آغا رفیع اللہ، محمد بشیر ورک ، اراکین صوبائی اسمبلی عظمی بخاری، سمیع اللہ خان ، صہیب احمدبھرت، راحیلہ خادم حسین ، اختر حسین بادشاہ ، محمد صفدر شاکر ، بلال فاروق تارڑ، عنیزہ فاطمہ اور عزالی سلیم بٹ شامل ہیں۔ دوسری جانب کئی اراکین اسمبلی مستعفی ہونے کے طریقہ کار سے ہی لاعلم نکلے، رکن قومی اسمبلی افضل کھوکھر ،صہیب بھرت، سیف کھوکھر کو استعفے کے طریقہ کار کا علم ہی نہیں ، بلال تارڑ ،عنیزہ فاطمہ سمیت دیگر رولز آف پروسیجر سے لاعلم نکلے ، کئی ارکان نے ٹائپ شدہ استعفے اسپیکر ز اور قیادت کے نام بھجوائے حالانکہ مستعفی ہونے کے لیے استعفیٰ ہاتھ سے لکھنے کی شرط ہے اورپرنٹ شدہ استعفیٰ قابل قبول نہیں ہوتا۔یادرہے کہ پی ڈی ایم کے 8دسمبر کو ہونے والے سربراہ اجلاس میں اپوزیشن اراکین کو 31دسمبر تک اپنے استعفے قیادت کو جمع کروانے کی ہدایت کی گئی ۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.