مریم نواز شریف کے جلد جیل جانے سے متعلق پنجاب حکومت نے عندیہ دیدیا ‎‎

لاہور(این این آئی) وزیر اعلیٰ پنجاب کی معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ حکومت کہیں نہیں جارہی بلکہ ضمانت منسوخ ہونے کے بعد مریم نواز اپنے اصل گھر جیل جائیں گی، یہ عدالت نے طے کرنا ہے کہ ان کی ضمانت کب منسوخ ہو رہی ہے،ہم نہیں چاہتے اپوزیشن کا کورونا علاج کرے ہم ان کا آئینی عدالت سے علاج چاہتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے

خصوصی بچوں کیلئے منعقدہ تقریب کے موقع پر خطاب اورمیڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ ایسے موضوع پر بات کرنے آئی ہوں جو ذہنی اور جسمانی معذوری کا شکار ہیں،ہماری ترجیحات اور ذمہ داریاں ان خصوصی افراد کو معاشرے کاکارآمد شہری بنانے کے لیے ہیں،سرکار کے ساتھ غیر سرکاری ادارے مل کر اس بوجھ کواٹھائیں ا،صل وی آئی پی لوگ یہ ہیں ان کے لیے خصوصی سہولیات فراہم کرنا وزیراعلی کا ویژن ہے،یہاں شاہی خاندان اور سیاسی افراد کے موروثی لوگ وی آئی پی رہے،پہلی بار حکومت پنجاب نے ایک پالیسی بنائی جس میں ان کے لئے معیاری تعلیم صحت سمیت دیگر ایشوز پر جدید طریقے اپنائے۔ا نہوں نے کہا کہ ایسے لوگ جس گھر میں یہ رہتے ہیں وہ مسائل کا شکار ہوتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ تو قدرتی معذوری ہے مگر کچھ زخمی اور اخلاقی معذوری کا شکار ہیں اور پی ڈی ایم کا ٹولہ ہے،اس ٹولے نے عوام کو کورونا کے آگے دھکیل دیا ہے اور صرف اپنے مفادات کا تحفظ کرنا چاہتے ہیں،ایسے افراد کے لیے ہم قانونی اور آئینی اداروں کو مضبوط کررہے ہیں، ان لوگوں نے عوام کو سیاسی غلام بنایا، ہم سیاسی غلاموں کو آزاد کرائیں گے اور ایسے ٹولے کا بھی علاج کریں گے،یہاں سیاسی پوسٹ مارٹم ہوگاجو جسمانی لنگڑے حکومت کو نیچادکھانے میں مصروف ہیں یہ حکومت دشمنی نہیں عوام دشمنی ہے،یہ دل پشوری

پروگرام نہیں چلے گا۔ا نہوں نے کہا کہ وزیراعظم قیادت کرتے ہیں،انتظامی ذمہ داری وزیراعلی پنجاب پر ہے،حالات واقعات کے مطابق اپوزیشن کو دوائی دی جائے گی،یہ پی ڈی ایم کورونا ہے،وائرس دیکھتا نہیں کہ ثنااللہ کا چہرہ ہے،کویڈ اور ان کی کرپشن کا کھیل جاری ہے،کرپشن کا کورونا کویڈ کورونا کے ہاتھوں چاروں خانے چت ہوگا،ہم نہیں چاہتے کورونا ان کا علاج کرے ہم آئینی عدالت سے ان کا علاج چاہتے ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.