آل پرائیویٹ سکولز ایکشن کمیٹی نے قومی شاہراہیں بلاک کرنے کا عندیہ دیدیا

کوئٹہ (آن لائن)آل پرائیویٹ سکولز ایکشن کمیٹی نے حکومت کو خبردار کیا ہے کہ اگر نجی تعلیمی اداروں کو بند کرنے کی کوشش کی گئی تو ملک گیر احتجاجی تحریک سمیت اپوزیشن کے ساتھ مل کر بلوچستان کے قومی شاہراہیں بلاک کردیں گے ایک طرف انٹرنیشنل سکوائش اوپنگ سرمنی میں وزیراعلی بلوچستان سمیت ڈیرھ سے زائد لوگ شریک ہوتے ہیں اور جامعات میں امتحانات

جاری ہیں تو دوسری جانب کورونا کا کہہ کر نجی تعلیمی اداروں میں تعلیمی سرگرمیاں اور امتحانات لینے پر پابندی عائد کرنا نجی تعلیمی اداروں کے معاشی قتل کے مترادف ہے حکومت اور بلوچستان ایجوکیشن فاؤنڈیشن کے ایسے کسی بھی فیصلے کو تسلیم نہیں کریں گے۔ ان خیالات کا اظہار آل پرائیویٹ سکولز ایکشن کمیٹی کے ڈپٹی کنونیئر حافظ نعمت اللہ، داؤد شاہ کاکڑ، ٹکری شفقت لانگو، زاہد اختر بلوچ و دیگر نے کوئٹہ پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ رواں سال بلوچستان میں پہلے6مہینے سے زائد تک تمام تعلیمی ادارے بند کئے گئے تھے اور اب ایک مرتبہ پھر کورونا پھیلاؤ کے خدشے کے پیش نظر تعلیمی اداروں کو بند کرنے کے نوٹیفکیشنز جاری کئے گئے ہیں بلکہ بلوچستان ایجوکیشن فاؤنڈیشن کی جانب سکولوں کو بند کرنے کے حوالے سے کمیٹی تشکیل دی گئی ہے جسے کسی صورت بھی قبول نہیں کرسکتے۔ انہوں نے کہا کہ ایک طرف اس وقت بھی بلوچستان کے جامعات اور کالجز میں امتحانات کا سلسلہ جاری ہے بلکہ وزیراعلی بلوچستان خود گزشتہ روز سکوائش اوپنگ سرمنی میں شریک رہے جس میں ڈیڑھ سے زائد لوگ شریک تھے اور وہاں کورونا پھیلاؤ کا کوئی خدشہ نہیں تھا مگر دوسری جانب سے نجی تعلیمی اداروں کو بند کرنے کے لئے نوٹیفکیشنز جاری کئے گئے ہیں جو کہ تعلیم دشمنی پر مبنی اقدام ہے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ 9مہینے سے

حکومت کی جانب سے نجی تعلیمی اداروں کے ساتھ کوئی تعاون نہیں کیا گیا ہے بلکہ نجی تعلیمی اداروں کے لئے مختص ایک ارب 11کروڑ روپے بلوچستان ایجوکیشن فاؤنڈیشن کے ایم ڈی و دیگر کی جانب سے نجی بینک کو انٹرسٹ(سود)کے لئے دیئے گئے ہیں جس کی ہم پرزور الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔ نجی تعلیمی ادارے اس وقت مالی بحران کے شکار

ہیں، عمارتوں کے کرایہ اور اساتذہ کی تنخواہیں ادا کرنے کے لئے ان کے پاس فنڈز موجود نہیں مگر حکومت بجائے نجی تعلیمی اداروں کے لئے فنڈز مختص کرے تعلیمی ادارے بند کرنے پر تلی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر سکولوں کو بند کرنے کی کوشش کی گئی اور ان کے مطالبات تسلیم نہ کئے گئے تو ملک گیر سطح پراحتجاجی تحریک شروع کریں گے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.