فنگر فش کے نام پر پاکستانی عوام کو سمندری چمگادڑ سمیت کیا کیا کھلایا جارہا ہے ؟ حیران کن انکشاف

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )پاکستانیوں کو مچھلی کے نام پر کیا کچھ کھلایا جانے لگا ؟ نجی ٹی پروگرام میں انکشاف نے تہلکہ مچا دیا ۔ تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی پروگرام میں صدر صدر کنزیومر سولیڈرٹی پنجاب محسن بھٹی انکشاف کرتے ہوئے کہا ہے کہ سردیوں میں مچھلی کے

نام پرعوام کیا کھا رہے انہیں پتہ ہی نہیں ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ فنگر فش کے نام پر مارکیٹ میں دستیاب مچھلی کوئی مقامی مچھلی کو بون لیس بنا کر نہیں بیچ رہے بلکہ مچھیرے حرام مچھلیاں ، سمندری چمگادڑ اور شار ک سمیت دیگر سمندری مخلوق پکڑ کر لاتے ہیں اور انہیں لگے ہاتھوں فروخت کیا جارہا ہے ۔ محسن بھٹی کا کہنا تھا کہ سمندری مچھلی اگر صفر درجہ حرارت میں پکڑ کر دیگر صوبوں میں منتقل کی جاتی ہے تو ایسی صورت میں مچھلی 23سے 25ڈگری سینٹی گریڈ میں رہتی ہے اس طرح ڈی کمپوزیشن کا عمل شروع ہو چکا ہوتا ہے اور بڑی تعداد میں بیکٹیریا پیدا ہوتے ہیں ۔ ایسی صورتحال میں خراب مچھلی کو زہریلا کیمیکل لگا کر بدبو کو ختم کر کے عام شہریوں کو کھلایا جاتا ہے اور کھانے والا یہ بھی نہیں جانتا کہ وہ کچھوا کھا رہا ہے ، چمگادڑ یا کوئی اور حرام مخلوق۔ایسی مچھلی کو کھانے سے انسانی بڑی آنت ، معدے اور خوراک کی نالی کینسر کا شکار ہوجاتی ہے ۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *