ایل این جی ریفرنس، شاہد خاقان عباسی، اْن کے بیٹے عبداللہ خاقان، مفتاح اسماعیل کیخلاف عدالت کا اہم فیصلہ

اسلام آباد (این این آئی) احتساب عدالت اسلام آباد نے ایل این جی ریفرنس میں 16 نومبر کو ملزمان پر فرد جرم عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔جمعرات کو کیس کی سماعت جج محمد اعظم نے کی۔سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی، اْن کے بیٹے عبداللہ خاقان، سابق وزیر خزانہ مفتاح

اسماعیل سیمت دیگر ملزمان کو پیش ہونے کی ہدایت کردی گئی ہے جبکہ کراچی میں موجود ملزمان پر ویڈیو لنک کے ذریعے فرد جرم عائد کی جائے گی۔احتساب عدالت اسلام آباد میں ایل این جی ریفرنس کی سماعت ہوئی۔ شاہد خاقان عباسی کے وکیل بیرسٹر ظفر اللہ خان نے عدالت میں مؤقف اپنایا کہ نیب کے مطابق اب بھی منصوبے سے قومی خزانے کو نقصان ہو رہا ہے، ایک جرم اگر جاری ہے تو اس پر کیسے فرد جرم عائد ہوسکتی ہے؟۔عدالت نے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی، سابق وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل، سابق ایم ڈی پاکستان اسٹیٹ آئل (پی ایس او) شیخ عمران الحق، سابق چیئرپرسن آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) عظمیٰ عادل، شاہد خاقان عباسی کے بیٹے عبداللہ خاقان، سوئی سدرن گیس کمپنی کے سابق ایم ڈی محمد امین سمیت دیگر ملزمان کو فرد جرم عائد کرنے کے لیے 16 نومبر کو طلب کر لیا۔کراچی میں موجود ملزمان پر وڈیولنک کے ذریعے فرد جرم عائد کی جائے گی۔ عدالت نے دو غیر ملکی ملزمان شنا صادق اور فلپ ناٹمن کا کیس الگ کردیا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *