کیا الیکشن میں غیر ملکی مداخلت ہوئی؟ امریکی حکام نے حقیقت اپنی عوام کے سامنے رکھ دی

واشنگٹن(این این آئی )امریکہ کے حکام نے کہا ہے کہ تین نومبر کو ہونے والے صدارتی انتخابات میں کسی غیر ملکی مداخلت کے شواہد نہیں ملے۔میڈیارپورٹس کے مطابق سیکیورٹی حکام نے بتایاکہ امریکہ کے مخالف کسی بھی ملک کی جانب سے صدارتی انتخابات میں مداخلت کی

نشان دہی نہیں ہوئی جس کے بعد یہ کہا جا سکتا ہے کہ امریکی عوام کے ووٹ سے ہی اگلا صدر منتخب ہو گا۔امریکہ کی سائبر سیکیورٹی اینڈ انفرا اسٹرکچر ایجنسی (سی آئی ایس اے)کے سربراہ کرسٹوفر کریبز نے جاری اپنے ایک بیان میں کہا کہ ہمارے پاس اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ہے کہ کسی غیر ملکی دشمن نے امریکیوں کو ووٹ ڈالنے یا ووٹوں کی گنتی میں اثر انداز ہونے کی کوشش کی۔اسی نوعیت کی یقین دہانی تین نومبر کو پولنگ ختم ہونے کے بعد بھی سیکیورٹی حکام نے کرائی تھی۔امریکہ کے سائبر کمانڈز جنرل پال نکاسن نے کہا تھا کہ ہم نے گزشتہ کئی ہفتوں اور مہینوں کے دوران انتخابات میں غیر ملکی مداخلت روکنے کے لیے جو اقدامات کیے تھے اس کے خاطر خواہ نتائج نکلے ہیں۔امریکی تحقیقاتی ادارے فیڈرل بیورو آف انویسٹی گیشن(ایف بی آئی)اور سائبر سیکیورٹی اینڈ انفرا اسٹرکچر ایجنسی (سی آئی ایس اے)نے تاحال ان الزامات پر کوئی ردِعمل ظاہر نہیں کیا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *