نیویارک روز ویلٹ ہوٹل خریدنے کے لیے حکومت کے بیوپاری دوست سرگرم ہو گئے ہیں

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)امریکا میں موجود پاکستان ملکیت روزویلٹ ہوٹل کی انتظامیہ نے 31اکتوبر سے ہوٹل مہمانوں کیلئے مکمل بند کرنے کا اعلان کر دیا ہے ۔ یہ ہوٹل تقریباً 100سال تک مہمانوں کی خدمت میں پیش پیش رہا ۔ تاہم موجودی معاشی صورتحال کی وجہ سے ہوٹل کو مکمل طور پر

بند کرنے کا اعلان کیا گیا ہے ۔اسی حوالے سے ن لیگی رہنما و سینیٹر آصف کرمانی نے کہا ہے کہ روز ویلٹ ہوٹل کو اونے پونے داموں میں خریدنے کیلئے حکومتی بیوپاری دوست سرگرم ہو گئے ہیں ۔ نجی ٹی وی چینل کے مطابق آصف کرمانی کا کہناتھاکہ نیویارک میں موجو د روزویلٹ ہوٹل پاکستان کی شناخت اور عوام کی ملکیت ہے ، اعلیٰ عدلیہ پاکستان کے قیمتی اثاثوں کی لوٹ سیل کے پلان کا نوٹس لے ۔قبل ازیں ومی ائیر لائن پی آئی اے کی ملکیت نیو یارک کے معروف ہوٹل روز ویلٹ کو مستقل طور پر بند کرنے کا اعلان کر دیا گیا۔ہوٹل کی ویب سائٹ پر کہا گیا کہ 31 اکتوبر سے ہوٹل مستقل طور پر بند کیا جا رہا ہے تاہم پیغام بعد میں ہٹا دیا گیا۔ہوٹل کے فرنٹ ڈیسک نے یکم نومبر کے بعد کی بکنگ لینے سے انکار کردیا جبکہ اسٹاف ہوٹل کی بندش کی وجوہات بتانے سے بھی انکاری ہے۔رپورٹ کے مطابق ہوٹل کے فرنٹ ڈیسک پر رابطہ کرنے پر بتایا گیا کہ ہوٹل بند کیا جا رہا ہے لیکن اسٹاف کی طرف سے ہوٹل بند کیے جانے کی وجوہات نہیں بتائی گئیں۔ پی آئی اے نے روزویلٹ ہوٹل 1970کی دہائی میں خریدا تھا جو نیویارک کے اہم ترین اقتصادی مرکز مین ہٹن میں واقع ہے۔واضح رہے کہ اقتصادی رابطہ کمیٹی نے 2 ستمبر کے اجلاس میں ہوٹل روز ویلٹ کے معاشی بحران پر قابو پانے کے لیے فنڈز کی منظوری دی تھی جب کہ اس سے قبل کابینہ کی نجکاری کمیٹی کا کہنا تھا کہ ہوٹل کو فروخت نہیں کیا جائے گا اور اسے تھرڈ پارٹی کے ساتھ جوائنٹ وینچر سے چلایا جائے گا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *